فرضی انکاؤنٹر معاملے میں یوگی سرکار کو جھٹکا

Share Article
yogi
یو پی میں یوگی آدتیہ ناتھ کو یعنی یوگی سرکار کو عام طور پر اپوزیشن پارٹی فرضی انکاؤٹر کا راج بتاتے ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ اس سرکار میں صرف ایک کام دھڑلے سے ہورہا ہے جس کو ہم فرضی انکاؤنٹر کہتے ہیں۔اس معاملہ میں سپریم کورٹ نے یو پی سرکار کو انکاؤٹر سے متعلق میں نوٹس جاری کیا ہے۔در اصل اس معاملہ کو لیکر ایک پی آئی ایل داخل کی گئی ہے۔پی ائی ایل میں اس بات کی درخواست کی گئی ہے کہ پولیس انکاؤنٹر کی عدالت کی نگرانی میں سی بی آئی یا ایس آئی ٹی سے جانچ کرائی جائے۔پی آئی ایل پر حکم دیتے ہوئے چیف جسٹس رنجن گگوئی نے کہا ہے کہ یہ ایک سنجیدہمعاملہ ہے جس میں پوری طرح سے سنوائی کرنے کی ضرورت ہے ۔آپ کو بتادیں اب اس معاملہ کی سنوائی 12فروری کو ہوگی۔
یو پی پولیس اس بات کا دعویٰ کرتی ہے کہ یو پی میں اب تک 1ہزار سے زیا دہ انکاؤنٹر کے معاملوں کو وہ انجام دے چکے ہیں۔لیکن پولیس اور یو پی سرکار کے اس دعوے پر اپوزیشن سوال اٹھا رہا ہے۔ سماجوادی پارٹی اور بہوجن سماجوادی پارٹی کا کہنا ہے کہ اگر ایسا ہوتا تو یو پی میں رام راج قائم ہوجاتا۔سچ تو یہ ہے کہ یو پی کی پولیس اپنے سیاست دانوں کو خوش کرنے کے لئے فرضی انکاؤنٹر کو انجام دیتے ہیں ۔اگر سچ میں ایسا ہوتا تو یو پی میں لوگ بغیر ڈر کے زندگی گزار رہے ہوتے۔لیکن این سی آر بی کا ڈیٹا بھی یو پی سرکار کے دعوؤں کی پول کھول رہا ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *