بہو کی پٹائی کے لیے ساس نے کا8 ہزار میل کا سفر کیا

Share Article
ساس اور بہو کی تلخی بہت مشہور ہے۔ مگر ہم ایک ایسی کہانی بتانے جارہے ہیں جس میں ہندوستان کی ایک ساس نے اپنی بہو کو سبق سکھانے کے لئے امریکہ کا سفر کیا ۔امریکی ریاست فلوریڈا کی پولیس کے مطابق ایک انڈین ساس و سسر نے اپنی بہو کو’’تمیز‘‘ سکھانے کے لیے آٹھ ہزار میل کا سفر کیا۔
66 سالہ جسبِیر کلسی اور ان کی 62 سال کی بیوی بھوپِندر کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ وہ ہِلسبرو کاؤنٹی میں مقیم اپنے بیٹے دیوبیِر کی بیوی کو نصیحت کرنے اور تمیز سکھانے کے لیے پنجاب سے گئے تھے۔انہوں نے اپنی بہو کو کیسی نصیحت دی ،اس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکت اہے کہ پولیس والا وہاں پہنچا تو سِلکی کے جسم پر پٹائی کے نشان اور نیل پڑے ہوئے تھے۔
اب ان دونوں یعنی ساس ا ور سسر کو زدوکوب سمیت کئی الزامات کا سامنا ہے۔سسر پر بہو کے گلے پر چھری رکھنے کا الزام بھی ہے۔مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق جب پولیس وہاں پہنچی تو ابتدائی طور 33سالہ سِلکی اور ایک سالہ بیٹی کو ان سے ملنے نہیں دیا گیا۔سِلکی گوئند نے عدالت میں سماعت کے دوران کہا کہ انھیں اپنے شوہر سے خطرہ ہے۔بہو نے عدالت کو بتایا کہ ’میں بہت ڈری ہوئی ہوں کیونکہ پچھلی رات اس کے شوہر نے ٹیلی فون پر دھمکی دی تھی کہ اگر میں نے ساس اور سسر کی زیادتوں کی بات پولیس کو بتایا تو وہ مجھے قتل کر دے گا اور پھر خودکشی کر لے گا۔‘ فی الوقت ملزموں پر زدوکوب اور حبس بیجا میں رکھنے اور مدد کے لیے پولیس تک رسائی میں رکاوٹ ڈالنے کی فردِ جرم عائد کی گئی ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *