ہندوستانی ٹینس کووقاردلانے والی ثانیہ مرز31برس کی ہوگئیں

Share Article
sania-mirza-file-photo
ہندوستانی ٹینس کھلاڑی ثانیہ مرزاآج 15نومبرکو31سال کی ہوگئی ہیں۔ثانیہ کاجنم 15نومبر1986کوممبئی میں ہواتھا لیکن ان کا بچپن حیدرآبادمیں گزرا۔حیدرآبادسے ہی ثانیہ ٹینس کی شروعات کی۔کم عمرمیں کامیابی کے جھنڈے گاڑنے والی ثانیہ اپنی کریئرکی شروعات سال 1999میں کی۔اس وقت ثانیہ کی عمرمحض 14سال تھی، جب انہو ں نے عالمی جونیئرچمپئن شپ میں حصہ لیاتھا۔سال 2000میں ثانیہ نے پاکستان میں کھیلے گئے انٹیل جونیئرچمپئن شپ جی5-مقابلے میں سنگل اورڈبل مقابلے میں جیت حاصل کی۔ڈبل مقابلوں میں ثانیہ کی جوڑی پاکستان کے جاہرہ عمرخان کے ساتھ تھی۔
ثانیہ مرزانے ایفروایشیائی، ایشیائی اورکامن ویلتھ گیمس کھیلوں کوملاکرکل 12میڈلس اپنے نام کیا۔ایفروایشائی کھیلوں میں ثانیہ کل ملاکرچارگولڈمیڈل جیتاہے۔ایشیائی کھیلوں میں ثانیہ نے ایک گولڈ،تین سلوراوردوبرانج میڈل جیتے ،جبکہ کامن ویلتھ گیمس میں ایک سلوراورایک برانچ میڈل جیتاہے۔
2004 میں انہیں حکومت ہندنے ارجن اعزاز سے نوازاگیاتھا۔اس کے بعد2006میں انہیں پدم شری ایوارڈ ملا۔اسی سال ثانیہ کوڈبل یوٹی کا’موسٹ امپریسونیوکمر‘کا ایوارڈ بھی دیاگیا۔گرینڈ سلیم کی بات کریں توثانیہ نے سب سے پہلے سال 2009میں آسٹریلین اوپن کامکس ڈبلس خطاب جیتاتھا اس کے بعدسال 2012میں فرینچ اوپن مکس ڈبلس کاخطاب، 2014میں یوایس اوپن مکس ڈبلس خطاب اور2015میں ونبلڈن کایوگل خطاب بھی اپنے نام کیا۔
ثانیہ ہندوستان بیسٹ سنگلس رینکنگ والی کھلاڑی ہیں۔ثانیہ ورلڈ رینکنگ میں 27ویں نمبرتک پہنچی ہیں۔سنگلس میں یہ ان کی اب تک کی سب عمدہ رینکنگ ہے۔یہ کسی بھی ہندوستانی خاتون ٹینس کھلاڑی بیسٹ رینکنگ ہے۔ثانیہ مرزانے مارٹیناہنگس کے ساتھ مل کرڈبلس میں نمبرون مقام حاصل کیاتھا۔
ثانیہ مرزا کے والد عمران مرزا ایک کھیلوں کے صحافی ہیں اور ان کی والدہ کا نام نسیمہ ہے جو ممبئی کی ہیں۔ ثانیہ نے حیدر آباد میں ایک مذہبی خاندان میں پرورش پائی۔ثانیہ نے چھ سال کی عمر میں ٹینس کھیلنا شروع کیا اور 2003 میں باقاعدہ طور پر ٹینس کے میدان میں اتریں۔ انہیں ان کے والد اور دوسرے فیملی کے اراکین نے انہیں ٹینس کی ابتدائی تربیت دی۔ انہوں نے سینٹ میری کالج سے گریجوایشن کا امتحان پاس کیا۔
ثانیہ نے جولائی 2009 میں حیدر آباد میں اپنے بچپن کے دوست صہیب مرزا ،جو ایک معروف کاروباری شخصیت ہیں، سے منگنی کی۔ یہ منگنی 28 جنوری 2010 کو ختم کر دی گئی اور 29 مارچ 2010 کو مشہور و معروف پاکستانی کرکٹر اور سابق کپتان شعیب ملک سے منگنی کر لی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *