آئی پی ایل اورعالمی کپ :ورک لوڈ کولیکرسچن تیندولکرنے کہی یہ اہم بات

Share Article
Sachin-Tendulkar

عالمی کپ کے پیش نظرہندوستانی کھیلاڑیوں کولیکرسابق انڈین کرکیٹرماسٹربلاسٹر سچن تیندولکر نے بڑی بات کہی ہے۔دراصل،ہندوستانی کھلاڑیوں کے ورلڈ کپ سے پہلے انڈین پریمئر لیگ (آئی پی ایل) 2019 میں کھیلنے سے ان پر پڑنے والا کام کا بوجھ لگاتارسرخیوں میں ہے۔ اب اس سلسلے میں عظیم بلے باز سچن تندولکر نے اپنی رائے کا اظہار کیا ہے۔ تندولکر کا کہنا ہے کہ آئی پی ایل میں کام کے بوجھ (ورک لوڈ)کو لے کر یکساں لائحہ عمل نہیں بناسکتے کیونکہ ہر کھلاڑی کی ضرورتیں الگ الگہوتی ہیں۔ انہوں نے یہ بات پیر کو کہی۔ آئی پی ایل ختم ہونے کے فورا بعد انڈین ٹیم کو انگلینڈ روانہ ہونا ہے جہاں 30 مئی سے ورلڈ کپ کھیلا جائے گا۔

تندولکر نے پی ٹی آئی سے کہا، ’ورلڈ کپ کے لئے ہر کھلاڑی کی تیاری الگ ہوتی ہے لہذا اس کا کام کاانتظام بھی الگ ہو گا‘۔ انہوں نے کپتان وراٹ کوہلی کی بات سے اتفاق کیا کہ ہر کھلاڑی کو خود دیکھناہوگا کہ وہ کتنا کام کابوجھ لے سکتا ہے اور اس کا فارم کیسا ہے۔ انہوں نے کہا، ’تسلسل سب سے اہم ہے۔ہر کھلاڑی کو اتنا ہوشیار ہونا چاہئے کہ وہ اس کا اندازہ کر سکے کہ اسے وقفے کی ضرورت ہے یا وہ کھیل سکتا ہے۔ یہ فیصلہ کھلاڑی کو خود کرنا ہے۔‘

تندولکر نے کہا، ’ایک تیز گیند باز کے طور پر جسپریت بمراہ کا کام وراٹ کوہلی یا مہندر سنگھ دھونی جیسے بلے باز یا وکٹ کیپر بلے باز سے بالکل الگ ہو گا۔ ان تمام کھلاڑیوں کے پاس بے پناہ تجربہ ہے اور وہ صحیح فیصلہ لیں گے۔‘

غور طلب ہے کہ کوہلی نے کچھ دن پہلے کہا تھا کہ ورلڈ کپ چار سال میں ایک بار آتا ہے اور آئی پی ایل ہر سال ہوتا ہے لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ ہم ٹورنامنٹ میں کھیلنے کو لے کر مصروف عمل نہیں ہیں۔ ہمیں ہوشیار بننا ہوگا اور اچھے فیصلے کرنے ہوں گے۔ اس کی ذمہ داری کھلاڑی پر ہوگی۔کسی کو بھی کوئی فیصلہ لینے کے لئے مجبور نہیں کیا جائے گا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *