روہت شیکھر موت معاملہ: کرائم برانچ کی چارج شیٹ پر عدالت نے لیا نوٹس، 25 کو سماعت

Share Article
Rohit Shekhar’s murder case

 

دہلی کی ساکیت کورٹ نے نارائن دت تیواری کے بیٹے روہت شیکھر کی موت کے معاملے میں کرائم برانچ کی جانب سے داخل چارج شیٹ پر نوٹس لے لیا ہے۔ اس معاملے پر اگلی سماعت 25 جولائی کو ہوگی۔

Image result for rohit shekhar tiwari death case

گزشتہ 18 جولائی کو کرائم برانچ نے چارج شیٹ داخل کیا تھا۔ چارج شیٹ میں روہت شیکھر کی بیوی اپوروا کو اہم ملزم بنایا گیا ہے۔ کرائم برانچ نے 518 صفحات کی چارج شیٹ داخل کی ہے۔ پولیس کے مطابق اپوروا کو اپنے شوہر پر شک تھا کہ اس کا شادی سے الگ ایک بچہ ہے۔ اپوروا کو خدشہ تھا کہ روہت کے بچے کو مستقبل میں جائیداد کا بڑا حصہ مل سکتا ہے۔ اپوروا اپنے شوہر کے رویے سے پریشان تھی۔ اپوروا نے شادی کے کچھ دن بعد ہی روہت کا گھر چھوڑ دیا تھا لیکن کچھ دنوں کے بعد جب دونوں میں بات چیت ہوئی تو وہ واپس آگئی تھی۔ واپس آنے کے باوجود روہت اور اپوروا کے درمیان نااتفاقی بڑھتی ہی گئی۔ کرائم برانچ نے چارج شیٹ میں گھر میں موجود لوگوں کے بیان اور گھر میں لگے سی سی ٹی وی کیمروں کے فوٹیج کو ثبوت کے طور پر پیش کیا ہے۔

Image result for rohit shekhar tiwari death case

روہت شیکھر کی موت 15 اور 16 اپریل کی درمیانی رات کو ہوئی تھی۔ ان کی بیوی اپوروا سپریم کورٹ میں بطور وکیل ہیں۔ اپوروا سے دہلی پولیس گزشتہ 21 اپریل سے پوچھ گچھ کر رہی تھی اور 24 اپریل کو گرفتار کیا تھا۔ روہت شیکھر نے اپنے باپ این ڈی تیواری کو اپنا والد ثابت کرنے کے لئے قانونی جنگ بھی لڑی تھی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *