’وہ اپنا جسم بیچتی ہیں کسی کا حق نہیں چھینتی‘جانئے کیوں یہ کہا اداکارہ رینوکا نے

Share Article

renuka-shahane

ممبئی: رینوکا شہانے سیکس ورکروں کی حمایت میں سامنے آئی ہیں۔ انہوں نے اداکارہ سچترا کرشن مورتی کے ایک ٹویٹ میں مجرموں اور طوائف کو ’برابر‘ کہے جانے پر اپنی رائے ظاہر کی ہے۔ رینوکا نے کہا کہ سیکس ورکروں پر لاگو کی گئی روایات کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔

سچترا نے ٹویٹ کیا، ’’اما ہمیشہ کہتی تھی کہ پیسہ ہی سب کچھ نہیں ہے۔ مجرموں اور طوائف کے پاس دھن (دولت)ہے۔ دولت معنی نہیں رکھتا، لیکن کردار اور ایمانداری معنی رکھتاہے۔ میں آج ان کے الفاظ کاصحیح معنی سمجھی ہوں۔ مجھے کبھی درمیانہ طبقے کے اقدار کو لے کر فخر محسوس نہیں ہوا‘‘۔

اس پر رینوکا نے جواب دیا،’’سچترا آپ کی اماکے تئیں کوئی توہین نہیں ہے، لیکن خاتون کے طور پر ہمیں اس ناانصافی کو بہتر بنانے کی کوشش کرنی چاہئے، جسے ہماری روایات نے طوائف پر لاگو کیا ہے۔ ہم طوائف کو بھلا برا کہتے ہیں، مگر ہمیں مجرموں اور طوائف کو یکساں طورپرنہیں دیکھنا چاہئے‘‘۔

رینوکا نے ایک کے بعد ایک 4 ٹویٹ کئے اور کئی اہم سوال اٹھائے۔ انہوں نے مزید کہا کہ طوائفہمیشہ وہ بیچتی ہیں جو ان کا اپنا ہوتا ہے لیکن مجرم ہمیشہ دوسروں کی چیزوں کو چھیننا چاہتے ہیں۔ طوائف کو اکثر اس میں زبردستی دھکیلا جاتا ہے۔ انسانی اسمگلنگ کے ذریعے 7 سال کی چھوٹی بچیوں کو اس میں دھکیل دیا جاتا ہے۔ کیا اس عمر میں کسی بچے کو نہ کہنے کا حق دیا جاتا ہے؟

رینوکا نے کہا کہ طوائف کے ساتھ برا برتاؤ کیا جاتا ہے انہیں گالی دی جاتی ہے، ریپ کیا جاتا ہے، ڈرگس دی جاتی ہے اور ان کے ساتھ یہ سب بیحدکم عمر میں کیا جاتا ہے۔اس سب کے بعد اس قسم ہوئے ریپ کے ساتھ انہیں اس دھندے میں اتار دیا جاتا ہے۔اتنا ہی نہیں انہیں ان کی کمائی تک نہیں دی جاتی۔

ایسا پہلی بار نہیں ہے جب رینوکا شہانے نے سماج میں موجود برائیوں کو لے کر اپنی آواز بلند کی ہے۔اس سے پہلے بھی وہ اکثر خواتین سے منسلک مسائل کو لے کر سامنے آتی رہتی ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *