الیکشن کمیشن نے کہا،:’مسلح افواج کی کارروائیوں پر تشہیر نہ کریں پارٹیاں ‘

Share Article

lok-sabha-elections2019

نئی دہلی: الیکشن کمیشن نے سیاسی جماعتوں سے لوک سبھا انتخابات کی تشہیری مہم کے دوران مسلح افواج کی طرف سے کی گئی کسی بھی کارروائی کو بنیاد بنا کر انتخابی تشہیر نہیں کرنے کو کہا ہے۔ اس نئے مشاورت سے کچھ دن پہلے الیکشن کمیشن نے پارٹیوں اور ان امیدواروں سے سیکورٹی اہلکاروں کی تصاویر کا استعمال انتخابی مہم میں نہیں کرنے کو کہا تھا۔

منگل کو جاری اس نوٹیفکیشن میں پارٹیوں اور ان امیدواروں کو مسلحافواج سے متعلق کسی بھی سرگرمی کا استعمال سیاسی تشہیر کے لئے نہیں کرنے کو کہا گیا ہے۔ اس سے پہلے الیکشن کمیشن نے پیر کو بمبئی ہائی کورٹ سے کہا تھا کہ وہ تمام سوشل میڈیا پلیٹ فارم پر اس کی طرف سے سابق میں تصدیق کرائے بغیر دیئے جانے والے سیاسی اشتہارات پر روک لگانے کے لئے ہدایت جاری کرے گا۔

الیکشن کمیشن نے اپنے وکیل پردیپ راجاگوپال کے ذریعے ہائی کورٹ کو مطلع کیا کہ کمیشن اور تمام سوشل میڈیا پلیٹ فارم کے حکام کے درمیان بات چیت کی تجویز پیش کی۔

اس کے بعد، سیاسی اشتہارات اور’قومی مفاد‘ سے متعلقہ دوسرے اشتہارات پر مختلف پابندیوں کو حتمی شکل دے کر لاگو کیا جائے گا۔ راجاگوپال نے چیف جسٹس نریش پاٹل اور جسٹس این ایم جمدار کی بنچ کے سامنے یہ بات کہی۔

بنچ وکیل ساگر سوریہ ونشی کے ذریعہ دائر ایک مفاد عامہ کی عرضی پر سماعت کر رہی تھی، اس میں ہائی کورٹ سے درخواست کی گئی ہے کہ الیکشن کمیشن سوشل میڈیا پر ادائیگی کی بنیاد پر سیاسی اشتہارات کے طور پر فرضی خبر کے ریگولیشن کے لئے الیکشن کمیشن کو ہدایت دیئے جائیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *