مذہبی اداروں، مدرسوں میں وشاکھا گائیڈ لائن لاگو کرنے سے متعلق درخواست مسترد

Share Article

 

سپریم کورٹ نے تمام مذہبی اداروں، مدرسوں میں وشاکھا گائیڈلائنس نافذکرنے کا مطالبہ کرنے والی درخواست مسترد کر دی ہے۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ مذہبی اداروں میں وشاکھا گائنڈلائنس نافذ کرنے کا حکم نہیں دیا جا سکتا ہے۔

درخواست میں کہا گیا تھا کہ مذہبی اداروں میں بھی خاتون ملازم کام کرتی ہیں اور ان کے خلاف بھی جنسی تشدد کے واقعات ہوتے ہیں۔ سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے صدر راکیش کھنہ نے رام رحیم جنسی استحصال معاملہ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ مذہبی مقامات پر جنسی تشدد کے واقعات ہوتے ہیں، لیکن ناخواندہ ہونے کی وجہ سے عورتوں آواز نہیںبلند کر پاتی ہیں۔ تب چیف جسٹس نے کہا کہ ہم دفعہ۔32 کے تحت عرضی پر سماعت نہیں کر سکتے ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *