راجیو گاندھی قتل: مدراس ہائی کورٹ نے نلنی کی پیرول تین ہفتے بڑھائی

Share Article
Rajiv Gandhi assassination: Madras High Court extended Nalini’s parole for three weeks

سابق وزیر اعظم راجیو گاندھی کے قتل کے معاملے میں سزا یافتہ نلنی شری ہرن کے پیرول کی مدت مدراس ہائی کورٹ نے جمعرات کے روزتین ہفتے اور بڑھا دی۔ پہلے اسے بیٹی کی شادی کے لئے 30 دنوں کی عام پیرول دی گئی تھی، جو 25 اگست کو ختم ہو رہی ہے۔ 52 سالہ نلنی شری ہرن کو 25 جولائی کو اپنی بیٹی ہریتا کی شادی کا بندوبست کے لئے پیرول پر رہا کیا گیا تھا۔ اس کی یہ بیٹی جیل میں پیدا ہوئی تھی اور لندن میں رہتی ہے۔

Image result for Rajiv Gandhi assassination: Madras High Court extended Nalini's parole for three weeks
ملک میں سب سے طویل عرصے تک جیل میں رہنے والے قیدیوں میں سے ایک نلنی کو 28 سال پہلے 15 جون، 1991 کو گرفتار کیا گیا تھا۔ یہ پہلی بار ہے جب وہ اپنی گرفتاری کے بعد سے پیرول پر باہر ہے۔ اس کی گرفتاری کے بعد سے اسے دی گئی مختصر ایمرجنسی پیرول صرف چند گھنٹوں تک ہی تھی۔ ایک بار اس کے بھائی کی شادی کے لئے اور دوسری بار 2016 میں اس کے والد کی موت کے بعد. پیرول کی شرائط کے مطابق اس مدت میں اسے سیاستدانوں سے ملنے، عوامی بیان دینے اور میڈیا کو انٹرویو دینے کی ممانعت ہے۔

Image result for Rajiv Gandhi assassination: Madras High Court extended Nalini's parole for three weeks
سپریم کورٹ نے 1999 میں نلنی اور چھ دیگر مجرموں کے خلاف موت کی سزا کو برقرار رکھا۔ تمل ناڈو حکومت کی سفارش پر سال 2000 میں نلنی کی موت کی سزا کو کورٹ نے عمر قید میں تبدیل کر دیا تھا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *