عام انتخابات سے قبل ہوسکتا ہے پلوامہ جیسا دہشت گردانہ حملہ : راج ٹھاکرے

Share Article

raj-thackeray

ممبئی : مہارشٹر نو نرمان سینا (ایم این ایس ) کے سربراہ راج ٹھاکرے نے پٹھان کوٹ اور پلوامہ جیسے دہشت گردانہ حملوں کو الیکشن سے جوڑتے ہوئے الزام لگایا کہ عام انتخابات کے ٹھیک قبل پلوامہ جیسا ایک اور حملہ ہوسکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وہ پلوامہ کے حملہ پر دیئے گئے اپنے بیان پر قائم ہیں اور اس بات کا امکان ہے کہ لوک سبھا انتخابات سے قبل اس قسم کا دوبارہ واقعہ دہرایا جائے ،مودی اور امت شاہ اپنے آئی ٹی سیل کے جال میں پھنسے ہوئے ہیں۔ راج ٹھاکرے کا کہنا ہے کہ ڈوکلام واقعہ پیش آنے پر بی جے پی نے چین کے سامان کے بائیکاٹ کا نعرہ لگا یا ،لیکن گجرات میں سردار ولبھ بھائی پٹیل کا مجسمہ چین میں ہی بنوایا ہے ،ہر کسی کو ملک دشمن کہنے والے خود عجیب وغریب حرکتیں کرتے ہیں۔

انہوں نے 25 دسمبر2015کا ذکر کیا کہ مودی نے اچانک لاہور پہنچ کر نواز شریف کی سالگرہ کے جشن میں شرکت کی، لیکن سات دن بعد ہی پٹھان کوٹ میں دہشت گردانہ حملہ پیش آیا اور اس کے تین مہینے بعد ہی چار ریاستوں کے اسمبلی الیکشن ہوئے تھے۔ رافیل کے کاغذات کے چوری ہونے کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت کے ذریعہ چوری کی بات سپریم کورٹ میں تسلیم کیے جانے کے بعد بہانہ بنایاجارہا ہے کہ اس کی کاپی چوری ہوئی ہے ،اس طرح مودی حکومت روز جھوٹ بول بول کر پھنس رہی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *