راہل گاندھی کا پی ایم مودی پر طنز۔ ملک خون کے آنسو رو رہا تھا اور’پرائم ٹائم منسٹر‘ فوٹوشوٹ کروا رہے تھے

RAHUL
کانگریس صدر راہل گاندھی آج تو آندھرا پردیش میں ہیں لیکن پلوامہ دہشت گردانہ حملے کو لے کر وزیر اعظم مودی پرحملہ کیا ہے۔ایک بار پھر بڑا حملہ بولتے ہوئے راہل گاندھی نے ٹویٹ کیا ہے کہ’’پلوامہ میں 40 جوانوں کی شہادت کی خبر کے تین گھنٹے بعد بھی ’پرائم ٹائم منسٹر‘ فلم شوٹنگ کرتے رہے۔ ملک کے دل و شہیدوں کے گھروں میں درد کا دریا امڑا تھا اور وہ ہنستے ہوئے دریا میں فوٹوشوٹ پر تھے‘‘۔
راہل کا الزام ہے کہ پلوامہ حملے کے تین گھنٹے بعد بھی وزیر اعظم نریندر مودی ایک چینل کے لئے فلم کی شوٹنگ کر رہے تھے۔ راہل نے وزیر اعظم کی شوٹنگ کی طرف سے منسلک تصاویر بھی ٹویٹر پرشیئر کی ہیں۔

اس سے پہلے جمعرات کو کانگریس کے ترجمان رندیپ سرجیوالا نے الزام لگایا کہ جب ملک اس گھناؤنے حملے کے باعث صدمے میں تھا تو اس وقت مودی کاربیٹ پارک میں ایک چینل کے لئے فلم کی شوٹنگ اوربوٹنگ کر رہے تھے۔ انہوں نے یہ بھی دعوی کیا کہ وزیر اعظم اپنے اقتدار کو بچانے کے لئے جوانوں کی شہادت اور ’راجدھرم‘بھول گئے۔سرجیوالا نے کہا، ’’ حملہ 14 فروری دن میں تقریبا تین بجے ہوئے اور وزیر اعظم قریب سات بجے تک شوٹنگ اور چائے ناشتے میں مصروف تھے۔ وزیر اعظم کے اس طرز عمل کو لے کر سنجیدہ سوال کھڑے ہوتے ہیں‘‘۔
ادھر، بی جے پی صدر امت شاہ نے کانگریس پر نشانہ لگاتے ہوئے کہا کہ ملک کی سلامتی پر وزیر اعظم کے عزم کو لے کر الزام لگانے کا ملک کے عوام پر کوئی اثر نہیں ہونے والا ہے۔ 14 فروری کو ہوئے پلوامہ خودکش دہشت گردانہ حملے میں سی آر پی ایف کے 40 جوان شہید ہو گئے تھے۔

 

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *