راہل گاندھی نے راج ببر پرجتایا بھروسہ، سونپی یوپی انتخابی مہم کمیٹی کی کمان

Share Article
raj-babbar

نئی دہلی: لوک سبھا انتخابات کے پیش نظر کانگریس صدر راہل گاندھی نے کمر کس لی ہے، ایسے میں 80 لوک سبھا سیٹوں والے اتر پردیش میں کانگریس اپنی پوری طاقت جھونکتی نظر آ رہی ہے۔ پرینکا گاندھی کو اتر پردیش میں بڑی ذمہ داری دے کر کانگریس نے واضح کر دیا ہے کہ وہ یوپی میں اپنے پورے دم خم کے ساتھ انتخابی میدان میں اترے گی، اسی ترتیب میں راہل گاندھی نے یوپی کانگریس صدر راج ببر کو بڑی ذمہ داری دیتے ہوئے اترپردیش انتخابات کمیٹی کا صدر بنایا ہے، اس کے لئے ساتھ ہی کانگریس نے چھ کمیٹیوں کی تشکیل کا اعلان بھی کیا ہے،ان کمیٹیوں میں کل 92 اراکین ہوں گے۔

یوپی کانگریس صدر راج ببر کو 32 رکنی کمیٹی کی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔ ان کی کمیٹی میں اہم رکن اسمبلیمیں کانگریس لیڈر اجے لالو، سابق ریاستی صدر نرمل کھتری، سابق مرکزی وزیر پرکاش جیسوال، سابق مرکزی وزیر سلمان خورشید، آر پی این سنگھ،جتن پرساد، ایم پی ڈاکٹر سنجے سنگھ، سابق ایم پی پرمود تیواری، سابق اپوزیشن ٹیم لیڈرپردیپ ماتھر، چھتیس گڑھ کے انچارج پی ایل پنیا، اتراکھنڈ کے انچارج انوگرہ نارائن سنگھ، عمران مسعود، للتیش پتی ترپاٹھی شامل ہیں۔

راج ببر کے علاوہ راہل گاندھی نے جن چہروں پراعتماد ظاہر کیا ہے اس میں کانگریس کے سینئر لیڈر راجیو شکلا، گجراج سنگھ اور جے کمار للو شامل ہے۔ راجیو شکلا کو میڈیا اور پبلسٹی کمیٹی کا چیئرمین، گجراج سنگھ کو تشہیر کمیٹی کا چیئرمین تو اجے کمار للو کو رابطہ کمیٹی کا چیئرمین منتخب کیا گیا ہے۔اس کے ساتھ ہی سابق مرکزی وزیر قانون سلمان خورشید کو الیکشن پالیسی ساز اور پلاننگ کمیٹی کا چیئرمین بناتے ہوئے راہل گاندھی نے بڑی ذمہ داری دی ہے۔ اس کمیٹی میں نرمل کھتری، سنجے سنگھ، پرمود تیواری، رام لال شامل ہیں۔
غور طلب ہے کہ ایس پی- بی ایس پی کے مہاگٹھ بندھن میں جگہ نہ ملنے کے بعد اب کانگریس اپنے دم پر ریاست کی تمام 80 لوک سبھا سیٹوں پر الیکشن لڑتی نظر آئے گی، جبکہ سماج وادی پارٹی 37 اور بہوجن سماج پارٹی 38 لوک سبھا سیٹوں پر الیکشن لڑیں گی۔ کانگریس کے لئے امیٹھی اور رائے بریلی کی سیٹیں چھوڑی گئی ہیں۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *