سی بی آئی معاملے میں ممتابنرجی کوراہل گاندھی سمیت اپوزیشن پارٹیوں کا ملاساتھ

Share Article
mamta
کولکاتہ پولس کمشنر راجیوکمارمعاملے کولیکروزیراعلیٰ ممتابنرجی اورسی بی آئی آمنے سامنے آگئی ہے۔وہیں کولکاتہ پولیس اور سی بی آئی کے درمیان تنازع اب سیاسی رخ اختیار کرتا جارہا ہے۔ اس معاملہ پر اب مسلسل سیاسی ردعمل سامنے آرہے ہیں۔ ایسالگ رہاہے کہ یہ لڑائی وزیراعظم بنام اپوزیشن ہورہیہے۔مرکزی حکومت کے خلاف ممتا بنرجی کی حمایت میں کئی پارٹیاں آگئی ہیں۔ اب اس معاملے میں ممتاکوکانگریس صدرراہل گاندھی سمیت اپوزیشن پارٹیوں کا ساتھ مل رہاہے۔

کانگریس صدرراہل گاندھی نے پی ایم مودی اورامیت شاہ پرحملہ کرتے ہوئے کہاکہ مغربی بنگال میں ہونے والے واقعات مودی اور بی جے پی بھارت کے اداروں پر کئے گئے ناقابل یقین حملے کا ایک حصہ ہیں۔ہم ممتابنرجی کے ساتھ کندھے سے کندھا ملاکرکھڑے ہیں۔ کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے گذشتہ روزٹویٹ کرکے کہا کہ میں نے آج رات ممتا دیدی سے بات چیت کی۔ انہیں بتایا کہ ہم ان کے ساتھ ہیں اور کندھا سے کندھا ملا کر ان کے ساتھ کھڑے ہیں۔

وہیں اروند کیجریوال نے کہا کہ مودی جی نے جمہوریت اور وفاقی ڈھانچہ کا مذاق بنادیا ہے۔ کچھ سال پہلے انہوں نے دہلی کے اینٹی کرپشن بیورو کے آفس پر پیراملیٹری فورس بھیج کر قبضہ کرلیا تھا۔ دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال آج دیدی سے ملنے کیلئے کولکاتہ جاسکتے ہیں۔

این سی پی سربراہ شرد پوار نے بھی ٹویٹ کرکے کہا کہ حکومت نے اپوزیشن کو ڈرانے کیلئے سی بی آئی کا زبردست طریقہ غلط استعمال کیا ہے۔

سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیو گوڑا نے کہا کہ مغربی بنگال کا واقعہ ہمیں ایمرجنسی کے دنوں کی یاد دلاتا ہے۔ ایمرجنسی کے دوران بھی ملک ایسے غیر آئینی طریقوں کو دیکھ چکا ہے۔وہیں لالویادونے بھی ممتاکے دھرنے کی حمایت کی ہے۔


لالویادونے ٹویٹ کرکے کہاکہ ’’ملک کے عام عوام بی جے پی اوراس کی اتحادی پارٹی سی بی آئی کے خلاف ہے۔ہم ممتاجی کے ساتھ کھڑے ہیں۔تاناشاہی کا ننگا ناچ ہورہاہے۔جمہوریت پرسب سے بڑاخطرہ۔آئین اورآئینی اداروں پربے مثال بحران ۔انتخابی جیت کیلئے ملک کو’گرہ یودھ‘ میں جھونکنے کی کوشش‘‘۔

تیجسوی یادو نے بھی ٹویٹ کرکے کہا کہ گذشتہ کچھ مہینوں میں سی بی آئی پر بی جے پی دفتر کے دباو میں لئے گئے سیاسی فیصلوں کی وجہ سے ریاستی حکومتوں کو ایسا فیصلہ کرنا پڑے گا۔ اگر اب بھی سی بی آئی بی جے پی کے اتحادی کی طرح کام کرتی رہے گی تو کسی دن انصاف پسند عوام اپنے طریقہ سے ان کا حساب نہ کردیں۔ جمہوریت میں عوام سے بڑا کوئی نہیں۔

بی جے پی حکومت کی ہراساں پالیسیوں اور CBI کے کھلے عام سیاسی غلط استعمال کی وجہ سے جس طرح ملک، آئین اور عوام کی آزادی خطرے میں ہے، اس کے خلاف ممتا بنرجی جی کے دھرنے کا ہم مکمل حمایت کرتے ہیں۔آج ملک بھرکااپوزیشن اورعوام اگلے الیکشن میں بی جے پی کوہرانے کیلئے متحد ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *