پلوامہ حملے پر فوج کی اپیل:بھٹکے ہوئے بچوں کوسرینڈر کروائیں والدین نہیں تو اب جو بندوق اٹھائے گا، مارا جائے گا

Share Article

indian-army

جموں و کشمیر کے پلوامہ میں ہوئے دہشت گرد حملے کے بعد غم وغصہ ہے ،لیکن اس حملے کے بعد پہلی بار فوج، سی آر پی ایف اور جموں و کشمیر پولیس نے مشترکہ پریس کانفرنس کی ہے۔پریس کانفرنس میں سی آر پی ایف کے آئی جی لیفٹیننٹ جنرل کنول جیت سنگھ ڈھلو نے کشمیری نوجوانوں کو لے کر ایک اپیل جاری کی ہے۔ ڈھلو نے کشمیری والدین سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے بھٹکے ہوئے بچوں کوسرینڈر کرنے کے لئے کہیں۔ ورنہ اب جو ملک کے خلاف بندق اٹھائے گا وہ مارا جائے گا۔

مشترکہ پریس کانفرنس شہید ہوئے جوانوں کو خراج عقیدت پیش کیا گیا۔ سری نگر میں سیکورٹی فورسز نے پریس کانفرنس میں کہا کہ جیش محمد پاکستانی فوج کا ہی بچہ ہے اور پاکستانی فوج کا اس حملے میں پورا پورا ہاتھ ہے۔ پریس کانفرنس میں کہا گیا کہسی آر پی ایف دستوں پر ہوئے حملے کے بعد سیکورٹی فورسز نے 100 گھنٹوں کے اندر حملے کے ماسٹر مائنڈ دہشت گردوں کو مار گرایا ہے۔ فوج کے ساتھ ہوئے تصادم میں جیش محمد کے تین کمانڈر ڈھیر ہوئے ہیں۔
سیکورٹی فورسز نے کہا کہ ہماری سرینڈر پالیسی بہت بہتر ہے، لہٰذا یہی صحیح راستہ ہوگا، جن کے بچے راستہ بھٹک گئے ہیں، اگر کوئی سرینڈر نہیں کرتا ہے تو ہم بندوق اٹھانے والے کو ماردیں گے۔
کشمیر کے آئی جی پی ایس پی پا نی کہا کہ، دہشت گرد بھرتی میں خاصی کمی آئی ہے، حالیہ دنوں میں فوج کا کوئی بھی نوجوان دہشت گرد تنظیم سے نہیں جڑاہے اور اس کی براہ راست تعریف خاندان کو جاتی ہے جو اپنے بچوں کو بھٹکنے سے روک رہے ہیں۔
ہندوستانی فوج کی چنار کورپس کے کورپس کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل ایس ڈھلو نے پلوامہ دہشت گردانہ حملے کے بارے میں کہا کہ’ہمارے پاس حملے میں استعمال کئے گئے دھماکہ خیز مواد کے بارے میں سراغ ہے، لیکن تفتیش جاری ہونے کی وجہ سے تفصیل سے نہیں بتایا جا سکتا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *