دھرنے پر بیٹھیں پر ینکا بوليں متاثرین سے ملے بغیر نہیں جاؤں گی

Share Article
Congress general secretary Priyanka Gandhi Vadra sitting on a dharna in Narayanpur on Mirzapur road.

 

سون بھدر قتل کے متاثرین سے ملنے جا رہی کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی کے قافلے کو روک دیا گیا۔ پرینکا کے اس قافلے کو نارائن پور پولیس اسٹیشن کے قریب روکا گیا۔ بتا دیں کہ سون بھدر میں 10 لوگوں کے قتل کے بعد پرینکا گاندھی متاثرہ خاندانوں سے ملنے کے لئے وہاں جا رہی تھیں۔

سون بھدر قتل کے متاثرین سے ملنے جا رہی کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی کے قافلے کو جمعہ کو روک دیا گیا۔ پرینکا کے اس قافلے کو نارائن پور پولیس اسٹیشن کے قریب روکا گیا۔ زمین تنازعہ میں سون بھدر میں 10 لوگوں کے قتل کے بعد پرینکا گاندھی متاثرہ خاندانوں سے ملنے کے لئے وہاں جا رہی تھیں۔

سون بھدر میں متاثرہ خاندانوں سے ملنے سے روکے جانے پر نارائن پور میں دھرنے پر بیٹھیں پرینکا گاندھی نے کہا، ‘ہم صرف متاثرہ خاندان سے ملنا چاہتے ہیں۔ میں تو یہاں تک کہا کہ میرے ساتھ صرف 4 لوگ ہوں گے۔ پھر بھی انتظامیہ ہمیں وہاں جانے نہیں دے رہا ہے۔ انہیں ہم بتانا چاہئے کہ ہمیں کیوں روکا جا رہا ہے۔ ہم یہاں امن سے بیٹھے رہیں گے۔

چنار گیسٹ ہائوس بھیجا گیا
بعد میں پولیس نے پرینکا گاندھی کو حراست میں لے لیا گیا۔ حراست میں لینے کے بعد پرینکا گاندھی کو چنار مہمان خانے لے جایا گیا۔ اس دوران کانگریس جنرل سکریٹری نے کہا، ‘مجھے نہیں پتہ کہ کہاں لے جایا جا رہا ہے، لیکن وہ جہاں لے جائیں گے ہم جانے کو تیار ہیں۔ لیکن سر نہیں جھکائیں گے۔ ‘اگرچہ سے Chunar گیسٹ ہاؤس میں پرینکا گاندھی پھر دھرنے پر بیٹھ گئیں اور کہا کہ جب تک انہیں شکار خاندانوں سے نہیں ملنے دیا جاتا ہے تب تک وہ واپس نہیں جائیں گی۔

اس سے پہلے پرینکا گاندھی نے وارانسی کے ٹراما سینٹر میں سون بھدر کی زخمیوں سے ملاقات کیں۔ اس دوران سون بھدر قتل کے زخمیوں کے پریواروں نے پرینکا گاندھی کو بیتی سنائی۔

Image result for Priyanka Gandhi to sit down, will not go without meeting victims

دریں اثنا، سون بھدر کے واقعہ والے علاقے میں اتر پردیش انتظامیہ نے دفعہ 144 نافذ کر دیا ہے۔

Image result for Priyanka Gandhi to sit down, will not go without meeting victims

معاملہ بدھ کو اتر پردیش کے سون بھدر کے مورتيا گاؤں میں زمین تنازعہ کو لے کر 10 لوگوں کو قتل کر دی گیا تھا۔ اس میں 28 افراد زخمی بھی ہو گئے تھے۔ بتایا جا رہا ہے کہ مورتيا گاؤں کے مضافات میں سینکڑوں بیگھا فارم ہے، جس پر کچھ دیہی آبائی طور پر کھیتی کرتے آ رہے ہیں۔

Image result for sonbhadra up

گائوں والوں کے مطابق اس زمین کا ایک بڑا حصہ گرام پردھان يگ دتت کے نام ہے۔ گرام پردھان نے ایک آئی اے ایس افسر سے 100 بیگھہ زمین خریدی تھی۔ جب بدھ کی صبح 11 بجے گرام پردھان یگ دتت گوجر نے اس زمین پر قبضے کے قریب 200 لوگوں اور 32 ٹریکٹروں کے ساتھ پہنچے اور زمین جوتنے کی کوشش کی، تو تنازعہ ہو گیا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *