کانگریس کی ترجمان پرینکا چترویدی نے جمعہ کے روز اپنے تمام عہدوں سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ انہوں نے ٹویٹ کر کہا،’’پارٹی میں محنت سے کام کرنے والوں کی کوئی قدر نہیں۔ یہاں ایسے لوگوں کو تحفظ مل رہا ہے، جو دوسروں کی بے عزتی کرتے ہیں اور گالی گلوج کرتے ہیں‘‘۔
 
Image result for Priyanka Chaturvedi, the Congress spokesman resigns
 
انہوں نے کہا کہ پارٹی کے لئے انہوں نے گالیاں اور پتھر کھائے ہیں۔ اس کے باوجود پارٹی میں رہنے والے لیڈروں نے ہی انہیں دھمکیاں دیں۔ جو لوگ دھمکیاں دے رہے تھے، وہ بچ گئے ہیں۔ ان کو بغیر کسی کارروائی کے بچا لیا گیا ہے۔ یہ بدقسمتی کی بات ہے۔
چترویدی نے اپنے ٹویٹر پروفائل سے کانگریس ترجمان عہدے کو ہٹا دیا ہے۔ ان سے رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی لیکن فون بند ہونے کی وجہ سے رابطہ نہیں ہو پایا۔
قابل ذکر ہے کہ کچھ وقت پہلے رافیل معاملے پر پرینکا چترویدی نے متھرا میں ایک پریس کانفرنس کی تھی۔ اس میں کانگریس کے مقامی کارکنوں نے ان کے ساتھ بدسلوکی کی تھی۔ اس کی شکایت پرینکا نے اعلیٰ کمان سے کی تھی اور کچھ کانگریسی کارکنوں پر کارروائی بھی ہوئی تھی۔ جیوتی رادتیہ سندھیا کے کہنے پر یہ کارروائی منسوخ کر دی گئی تھی، جس کی وجہ سے پرینکا چترویدی کافی ناراض ہوئیں اور انہوں نے کانگریس سے استعفیٰ دے دیا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here