priyanka
لوک سبھا انتخابات کے دوران کانگریس کوبڑا جھٹکالگاہے۔دراصل،پرینکا چترویدی نے کانگریس کے ترجمان سمیت پارٹی کے تمام عہدوں سے استعفیٰ دے دیا ہے۔یعنی کانگریس کی بے باک وسرگرم ترجمان پرینکا چترویدی نے کانگریس چھوڑ دیا ہے۔ جمعہ کی صبح ہی انہوں نے پارٹی صدر راہل گاندھی کو اپنا استعفیٰ بھیج دیا ہے۔اس سے پہلے صبح انہوں نے اپنے تمام پروفائل سے بھی کانگریس کا نام ہٹا دیا تھا اور پارٹی کے تمام گروپ کو تھینک یو میسیج لکھ کر الوداع کہہ دیا ہے۔
آپ کوبتادیں گزشتہ دنوں پرینکا جب رافیل سے متعلق ایک پریس کانفرنس کرنے اترپردیش کے متھرا پہنچی تھیں، تو وہاں پارٹی کے کچھ ممبران نے مبینہ طورپران سے بدسلوکی کی تھی۔ پرینکا چترویدی نے پارٹی کے ان کارکنان کو مبینہ طورپر ’غنڈہ‘ قرار دیا تھا۔اس کے بعد پرینکا کی شکایت پر پارٹی نے بدسلوکی کرنے والے ممبران کو باہرنکال دیا تھا، لیکن بدھ کوانہیں پھر پارٹی میں شامل کیا گیا، جس کے بعد پرینکا چترویدی نے پارٹی کے برتاؤکے تئیں ناراضگی ظاہرکی تھی۔آخرکارکانگریس ترجمان پرینکا چترویدی نے ناراض ہوکرپارٹی سے استعفیٰ دے دیا ہے۔
ذرائع کی مانیں تو پرینکا کی ناراضگی کی دوسری بڑی وجہ یہ ہے کہ انہیں امید تھی پارٹی گروداس کامت کے انتقال کے بعد خالی ہوئی سیٹ سے لڑوا سکتی ہے۔لیکن پارٹی نے سنجے نروپم کو وہ سیٹ دے دی اور نروپم کی سیٹ پر بالی ووڈ اداکارہ ارملا ماتونڈکر کو اپنا امیدوار بنایا۔ پرینکا کو متھرا سیٹ سے بھی الیکشن لڑانے کا وعدہ کیا گیا تھا۔ذرائع بتاتے ہیں کہ، پرینکا گزشتہ ایک ماہ سے شیوسینا اور بی جے پی دونوں کے رابطے میں ہیں۔ فی الحال بی جے پی میں ان کی بات نہیں بن پائی اسی لئے جلد ہی وہ شیوسینا میں شامل ہو سکتی ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here