راہل کے گھر پہنچے پرینکا اور سندھیا

Share Article

پرینکا گاندھی واڈرا نے منگل کو اپنا عہدہ سنبھال لیا ہے۔ وہ پہلی بار کسی سیاسی اجلاس میں حصہ لے رہی ہیں۔ کانگریس ہیڈکوارٹر میں اب ان کے نام کی نام پٹری بھی لگ گئی ہے۔

 

 

کانگریس صدر راہل گاندھی کی بہن پرینکا گاندھی واڈرا نے منگل کو سرکاری طور پر کانگریس جنرل سکریٹری کا عہدہ سنبھال لیا ہے۔ منگل کو ہی کانگریس ہیڈ کوارٹر میں ان کے نام کے پلیٹ بھی لگ گئی ہے، جس پر ‘پرینکا گاندھی واڈرا، سیکرٹری جنرل لکھا ہے۔ پرینکا پیر کو ہی امریکہ سے لوٹی ہیں اور آج پہلی بار کسی سیاسی اجلاس میں حصہ لے رہی ہیں۔ اتر پردیش کانگریس کے رہنماؤں کے ساتھ ملاقات کے لئے پرینکا گاندھی کانگریس صدر راہل گاندھی کے گھر پر پہنچی ہیں۔ وہ پچھلے دروازے سے یہاں پہنچی، جبکہ مین گیٹ پر خالی گاڑیاں پہنچیں۔ اس اجلاس میں جیوتی سندھيا بھی پہنچے ہیں۔

 

 

غور طلب ہے کہ پرینکا گاندھی واڈرا کو راہل گاندھی نے لوک سبھا انتخابات کے لئے مشرقی اتر پردیش کی ذمہ داری دی ہے۔ ان کے ساتھ جیوتی رادتیہ سندھیا کو مغربی اترپردیش کی ذمہ داری دی ہے۔ کانگریس پارٹی نے اتر پردیش کی تمام 80 لوک سبھا سیٹ پر الیکشن لڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پرینکا گاندھی کانگریس صدر راہل گاندھی کے ساتھ ملاقات کریں گی، اس کے علاوہ وہ اپنے عمل سے آنے والے پروگرام پر بھی بحث کریں گی۔ غور طلب ہے کہ منگل کی شام کو ہی 5.30 بجے پرینکا گاندھی، راہل گاندھی، جیوتی رادتیہ سندھیا اترپردیش کے رہنماؤں سے با ت چیت ہوئی تھی ۔

 

 

بتا دیں کہ منگل کو ہی ایک اخبار کو انٹرویو میں کانگریس صدر راہل گاندھی نے پرینکا گاندھی کے رول پر بات کی۔ انہوں نے کہا کہ کیونکہ پرینکا گاندھی کو جنرل سکریٹری بنایا گیا ہے، ایسے میں ان کا رول صرف اتر پردیش تک محدود نہیں رہتا ہے بلکہ پورے ملک میں ان کا رول ہوںگے۔گزشتہ ماہ جنوری میں پرینکا گاندھی کو کانگریس کا جنرل سکریٹری مقرر کیا گیا تھا، لیکن وہ اپنی بیٹی کے علاج کے لئے امریکہ میں تھیں۔ ایسے میں اب وہ واپس بھارت لوٹی ہیں اور آتے ہی وہ ان کے کام میں لگ گئی ہیں۔
آپ کو بتا دیں کہ پہلے کہا جا رہا تھا کہ پرینکا گاندھی 10 فروری کو لکھنؤ کے رمابائی میدان میں ہونے والی کانگریس ریلی میں شامل ہو سکتی ہیں۔ لیکن اب کانگریس نے اپنے پلان میں تبدیلی کی ہے، بتایا جا رہا ہے کہ اب پرینکا کنبھ سے اپنے مشن اتر پردیش کا آغاز کر سکتی ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *