جموں و کشمیر میں پیر کے روزسے بحال ہو جائے گی پوسٹ پیڈ موبائل فون سروس

Share Article

جموں و کشمیر میں حکومت نے پوسٹ پیڈ موبائل فون سروس کو وادی کشمیر میں پیر کے روزسے بحال کرنے کی تیاری کر لی ہے۔ حالانکہ پری پیڈ موبائل فون سروس کے لئے ابھی کچھ وقت اور لگے گا۔ لینڈ لائن فون سروس پورے وادی کشمیر میںاچھی طرح سے کام کر رہی ہے۔ ادھر، وادی کشمیر میں جمعہ کے روز پر تشدد مظاہروں کا خدشہ کے سبب جمعہ کے روز لگائی گئی پابندیاں ہفتہ کے روز تقریباً تمام علاقوں سے ہٹا لی گئی ہیں۔ ہفتہ کو زیادہ تر علاقوں سے پابندیاں ہٹنے کے بعد وادی کشمیر میں معمولات زندگی آہستہ آہستہ ٹریک پر واپس آ ر ہے ہیں۔اسی درمیان وادی کے تمام حساس مقامات پر اضافی حفاظتی دستوں کی تعیناتی کو بدستوربرقراررکھا گیا ہے۔ سڑکوں پر گاڑیوں کی لمبی لمبی قطاریں دیکھی گئیں۔ صبح شام دکانیں کھلنے کے ساتھ ہی اب کئی مقامات پر بازار بھی کھلنے لگے ہیں۔

حکومت کے ذریعہ پوسٹر جاری کرنے کے بعد لوگ اب منڈیوں میں اپنی بڑی بڑی دکانیں بھی کھولنے لگے ہیں۔ ریاستی انتظامیہ کے ذریعہ لگائے جا رہے پوسٹروں میں لوگوں کو دہشت گردوں اور علیحدگی پسندوں سے نہ ڈرنے کا مشورہ دیا گیا ہے اوراپنے کاروباری تنصیبات کو بغیر کسی خوف کے کھولنے کے لئے کہا گیا ہے۔ ریاستی انتظامیہ کے ذریعہ سیاحت کو لے کر ایڈوائزری واپس لینے کے بعد سیاح بھی اب وادی کشمیر میں نظر آنے لگے ہیں۔ وادی میں تعلیمی ادارے ہفتہ کے روز بھی کھلے ہیں۔ دفاتر میں حاضری معمول سے زیادہ ہے۔ ریہڑی پٹری اور ٹھیلا لگانے والے بھی گلی محلوں میں نظر آ رہے ہیں۔ کشمیر کی عوام بھی ایک دن کی پابندیوں کے بعد اپنے روزانہ کے کاموں کے لئے گھروں سے باہر نکلی۔ ان سب کے باوجود جموں و کشمیر میں موبائل انٹرنیٹ سروس اب بھی بند ہے۔ وادی کشمیر کے تمام حساس مقامات پر سیکورٹی فورسز مستعد ہیں۔ جموں و کشمیر کے چیف سکریٹری (پلاننگ کمیشن) روہت کنسل کے مطابق جموں و کشمیر کے باقی حصوں میں پیر کی دوپہر 12 بجے سے پوسٹ پیڈ موبائل فون کی خدمات بحال ہو جائیں گی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *