عہدہ پانے کی دوڑ

Share Article

دلیپ چیرین
ملک کی اعلیٰ جانچ ایجنسی سینٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن(سی بی آئی) آج کل کافی مصروف ہے۔ حال ہی میں جس طرح ایک کے بعد ایک گھوٹالے سامنے آرہے ہیں، سی بی آئی کے افسران جانچ کے کاموں میں بری طرح الجھے ہوئے ہیں، لیکن اس کے ساتھ ساتھ سی بی آئی کے اندر ایک اور چیز کی گہما گہمی ہے۔ اس ادارہ کے موجودہ ڈائریکٹر اشونی کمار نومبر کے آخر میں ریٹائر ہو رہے ہیں اور نئے ڈائریکٹر کی تلاش کا کام زوروں پر ہے۔ دلچسپ حقیقت یہ بھی ہے کہ حکومت انٹیلی جنس بیورو(آئی بی) اور ریسرچ اینڈ انالیسس ونگ(را) کے لیے بھی نئے سربراہوں کے ناموں کو حتمی شکل دینے میں لگی ہے، کیوں کہ ان دونوں اداروں کے موجودہ سربراہ راجیو ماتھر اور کے سی ورما بھی سبکدوش ہونے والے ہیں، حالانکہ کچھ لوگوں کا ماننا ہے کہ اشونی کمار کی مدت ملازمت میں توسیع کی جاسکتی ہے، لیکن جس طرح کئی سینئر آئی پی ایس افسر اس عہدہ کو پانے کے لیے جوڑ توڑ میں لگے ہوئے ہیں، اس کے سبب ان کی  مدت ملازمت میں توسیع کے امکان کم ہی نظر آتے ہیں۔ سی بی آئی  ڈائریکٹر کے عہدہ کی دوڑ میں 1975بیچ کے ہریانہ کیڈر کے آئی پی ایس افسر اور نیشنل انویسٹی گیٹنگ ایجنسی کے سربراہ ایس سی سنہا، 1974بیچ کے اترپردیش کیڈر کے آئی پی ایس اور انڈو تبت بارڈر پولس کے ڈائریکٹر جنرل آر کے بھاٹیہ، بہار کیڈر کے ریلوے سیکورٹی فورس کے ڈائریکٹر جنرل رنجیت سنہا اور مدھیہ پردیش کے ڈائریکٹر جنرل آف پولس ایس کے راوت جیسے افسر شامل ہیں۔ حالانکہ یوپی اے حکومت کے دور اقتدار میں سینئر نوکرشاہوں کو مدت ملازمت میں توسیع دینے کی ایک روایت چل پڑی ہے، لیکن اس بابت سارے فیصلے وزیراعظم کے دفتر کے ذریعہ ہی لیے جاتے ہیں اور پرتھوی راج چوہان کی وداعی کے بعد اب آگے کیا ہوگا، یہ بتانا مشکل ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *