نئی سوچ کے ساتھ جدید ٹیکنالوجی کے فروغ پر پی ایم نے دیا زور

Share Article

 

وزیر اعظم نریندر مودی نے نئی سوچ کے ساتھ جدید ٹیکنالوجی کو فروغ دینے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ حکومت طلباء کو چھٹی جماعت سے ہی مشین لرننگ آرٹیفیشیل انٹیلی جینٹ اور بلاک چین جیسی جدید تکنیکوںسے روبرو کروانے کی بھرپور کوششوںمیں مصروف ہے۔

وزیر اعظم مودی نے پیر کے روز چنئی میں دوسرے بھارت۔ سنگاپورمشترکہ ہیکاتھن کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہیکاتھن نوجوانوں کو جدید خیالات کے ساتھ عالمی مسائل کا حل تلاش کرنے میں مدد کرتے ہیں۔ شرکاء کو عالمی مسائل کاحل تلاش کرنے کے لئے ٹیکنالوجی تک پہنچ ملتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہیکاتھن کے اس سیزنمیں پائے گئے حل کل کے لئے اسٹارٹ اپ خیالات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کی معیشت کو پانچ کھرب ڈالر تک پہنچانے میں اسٹارٹ اپ اور نئی سوچ کا اہم کردار ہو گا۔ مودی نے کہا کہ بھارت تین بہترین اسٹارٹ اپ فرینڈلی اکوسسٹم میں شمار ہے۔ بھارت نے گزشتہ پانچ سالوں میں نئی سوچ اور نئی توانائی کے ساتھ کام کرنے پر بہت زور دیا ہے۔

انہوں نے طلباء سے ملک کے مسائل کے ساتھ ساتھ عالمی مسائل کا بھی حل تلاش کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ دنیا کو ہندوستان سے بہت امیدیں ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ حکومت ملک کو ’عظمت‘ کی راہ پر لے جائے گی جہاں یہ پوری دنیا کے لئے فائدہ مند ہو گا۔ انہوں نے ہیکاتھن میں حصہ لینے والے طالب علموں کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے آج عوام کے سامنے آنے والے کئی مسائل کو حل کرنے کی کوشش کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اٹل انوویشن مشن، پی ایم ریسرچ فیلو شپ، اسٹارٹ اپ انڈیا مہم جیسے پروگرام 21 ویں صدی کے بھارت کی بنیاد ہیں۔ ایک ایسا بھارت جو نئی سوچ کی ثقافت کو فروغ دیتا ہے۔ ہم بھارت میں گزشتہ سالوں سے اسمارٹ انڈیا ہیکاتھن کر رہے ہیں۔ یہ پہل حکومت، صنعت سے وابستہ لوگوں، اسرو جیسے تمام بڑے اداروں کو ایک ساتھ لاتی ہے۔ مودی نے کہا کہ گزشتہ سال، ہیکاتھن کی توجہ مقابلہ تھی۔ اس سال، تعاون اور ایک دوسرے کی کوششوں کو پورا کرنے پر زور دیا گیا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *