سردار بلبھ بھائی پٹیل کا 182 میٹر اونچا مجسمہ ’اسٹیچو آف یونیٹی‘ ملک کے نام وقف 

Share Article
Sardar-Patel-Statue-Of-Unit
ملک کے پہلے وزیرداخلہ سردار بلبھ بھائی پٹیل کی آج 143ویں جینتی ہے۔اس موقع پروزیراعظم نریندر مودی نے گجرات کے نرمدا ضلع میں کوڑیا میں واقع سردار سروور باندھ سے تقریبا تین کلومیٹر کی دوری پر واقع سادھو دیپ پر بنی سردار بلبھ بھائی پٹیل کا 182 میٹر اونچا مجسمہ ’اسٹیچو آف یونیٹی‘ ملک کے نام وقف کر دیا ہے۔ مرد آہن سردار بلبھ بھائی پٹیل کے اس مجسمہ کا افتتاح ان کی 143 ویں سالگرہ پر کیا گیا۔

گجرات کے نرمدا ضلع میں بنا یہ مجسمہ دنیا کا سب سے اونچا ہے۔182میٹر کی اونچائی کے ساتھ اس کا وزن 1700ٹن، پیرکی اونچائی 80، ہاتھ اونچائی 70فٹ، کندھے کی اونچائی 140فٹ اور چہرے کی اونچائی 70فٹ ہے۔ اس مجسمہ کے افتتاح کے ساتھ ہی چین میں واقع اسپرنگ فیلڈ مہاتما بودھ کے 153 میٹر اونچے مجسمہ کو پیچھے چھوڑتے ہوئے یہ دنیا کا سب سے اونچا مجسمہ بن گیا ہے۔ تقریبا تین ہزار کروڑ روپے کے اخراجات سے تقریبا ساڑھے تین برسوں میں بن کر یہ مجسمہ تیار ہوا ہے۔ اس مجسمہ کی اونچائی نیویارک میں واقع ’اسٹیچو آف لبرٹی ‘سے تقریبا دو گنی ہے۔ اسے بنانے کا اعلان گجرات کے اس وقت کے وزیر اعلی نے جو اب ملک کے وزیراعظم ہیں سال 2010 میں کیا تھا۔اس کا کام ایل اینڈ ٹی کمپنی کو اکتوبر 2014 میں سونپا گیا تھا۔ کام کی ابتدا اپریل 2015 میں ہوئی تھی۔

 

 

 

دنیاکی سب سے اونچامجسمہ کی بات کریں تو ابھی چین کا اسپرنگ ٹیمپل بودھ پہلے مقام تھا،لیکن اب ہندوستان کی اسٹیچوآف یونیٹی نے اسے پچھاڑدیاہے۔ اسکے ساتھ ہی یہ دنیا کا سب سے اونچا مجسمہ بن گیا ہے۔سردارپٹیل کا مجسمہ اسٹیچو آف یونیٹی کی اونچائی 182میٹر ہے، جبکہ چین کے اسپرنگ ٹینپل کی اونچائی 153میٹر ہے۔ وہیں امریکہ کی اسٹیچوآف لبرٹی کی اونچائی 93میٹر ہے اوربرازیل کی کرائسٹ دی رمیڈر 38میٹرہے۔

 

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *