ارریہ :فاربس گنج میں پی ایم مودی اپوزیشن پرجم کربرسے، کیا بڑااعلان

Share Article
modi

لوک سبھا انتخابات 2019کے پیش نظروزیراعظم نریندرمودی پورے ملک میں انتخابی دورہ کررہے ہیں۔اسی ضمن میں مغربی بنگال میں انتخابی ریلی سے خطاب کرنے کے بعد پی ایم نریندر مودی بہار کے ارریہ ضلع کے فاربس گنج پہنچے۔ریلی میں وزیر اعظم کے ساتھ وزیر اعلیٰ نتیش کمار، نائب وزیر اعلیٰ سشیل مودی، بی جے پی کے ریاستی صدر نتیانند رائے، مرکزی وزیر رام ولاس پاسوان وغیرہ بہت سے لوگ موجود تھے۔ منچ سے پی ایم نے انتخابی جلسہ میں موجود لوگوں کو سلام کیا اور کہا کہ آپ سب کو اتنی تعداد میں دیکھ کر دل گدگد ہو گیا ہے۔ آپ سب کا پیار، بھروسہ ہی میرا خزانہ ہے۔آپ کے آشیرواد ہی میں آپ کا سیوک (خادم) بنا ہوں۔
پی ایم نے اپوزیشن پر طنز کستے ہوئے کہا کہ ’کچھ لوگوں کو بھارت ماتا کی جے بولنے میں درد ہوتا ہے۔ کچھ لوگ بھارت تیرے ٹکڑے ہوں گے نعرہ لگانے والوں کے ساتھ ملے ہوئے ہیں۔ سب کو یہ سوچنا چاہئے کہ کسی بھی ذات مذہب سے پہلے ہم ہندوستانی ہیں۔پی ایم مودی نے وزیر اعلی نتیش کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ بہار میں وزیر اعلی نتیش کی قیادت میں ریاست کی ترقی ہوئی ہے۔ عوام کی تپسیا کا حساب میں سود سمیت لوٹاؤں گا۔ عوام کی تپسیا بیکار نہیں جانے دوں گا۔بہار سے بنگال تک عوامی سیلاب نظر آرہا ہے۔

وزیر اعظم نریندر مودی نے ہفتہ کے روز فاربس گنج میں اعلان کیا کہ مرکز کی نئی حکومت ملک کے تمام کسانوں کو ہر سال 6 ہزار کی نقد مدد دے گی۔ اس کے لئے پانچ ایکڑ کی موجودہ حد ختم کر دی جائے گی۔ کسان ندھی سمان یوجنا کا دائرہ آنے والے وقت میں بڑھایا جائے گا۔

انہوں نے اپوزیشن کو چیلنج کیا کہ وہ پاکستان کے خلاف بھارت کی فوجی کارروائی پر عوام کے درمیان بھی جاکر اس کی تنقید کریں۔ وزیر اعظم ارریہ لوک سبھا علاقے کے بی جے پی امیدوار پردیپ سنگھ کی حمایت میں ہفتہ کے روز یہاں انتخابی ریلی سے خطاب کر رہے تھے۔
وزیر اعظم نے بین الاقوامی سرحد نیپال سے ملحق سیمانچل کی زمین سے کہا کہ 26/11 حملے کے بعد گزشتہ کانگریس حکومت نے اس معاملے میں پاکستان کو سزا دینے کی بجائے ہندوؤں کو پھنسانے کی سازش رچی۔ یہ سب کانگریس نے ووٹ بینک کی سیاست کے لئے کیا۔وزیراعظم نے کہا کہ حب الوطنی کی سیاست کیا ہوتی ہے یہ آپ نے پہلے اری حملے اور بعد میں پلوامہ حملے میں دیکھی۔ پہلے سرجیکل اسٹرائک پھر ایئر اسٹرائک ہوئی۔ پہلے جو پاکستان چوری اور سینازوری کرتا تھا، آج دنیا بھر میں فریاد لگا رہا ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ بھارت نے پاکستان میں گھس کر مارا بھی اور اس دنیا میں الگ تھلگ بھی کر دیا۔پی ایم مودی نے کہا کہ پہلے دو مرحلے کی پولنگ کے بعد تمام مخالفین کی بولتی بند ہو گئی ہے۔ اب ایئراسٹرائک کے ثبوت نہیں مانگتے ہیں۔ پہلے اور دوسرے مرحلے کے ووٹروں نے ان کے منہ پر تالا لگا دیا ہے۔لالو یادو اورتیجسوی یادو کو نشانے پر لیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پہلے باپ نے بھی یہی کیا اور بیٹا بھی یہی کر رہا ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *