سعودی عرب کی سپریم علماء کونسل نے کابینہ اس بیان کی تائید کی ہے جس میں عازمین حج پر زور دیا گیا تھا کہ وہ فریضہ حج کے دوران اپنی توجہ مناسک حج کر پرمرکوز رکھیں اور ہرقسم کی مسلکی، فرقہ وارانہ اور سیاسی نعروں سے گریز کریں۔
 
العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب کی علماء کونسل کے جنرل سیکریٹریٹ سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ حج بیت اللہ کے لیے آنے والے فرزندان توحید کا اصل کام مناسک حج کی ادائی ہے۔ حج کے ایمانی مقاصد کا حصول ہی ہر حاجی کی پہلی ترجیح ہے۔ حجاج کرام کو حج کی عبادت کے موقعے سے فایدہ اٹھا کرخود کو عبادت اور اطاعت الہیٰ کے لیے وقف کر دینا چاہیے۔ حجاج کرام کے لیے کسی قسم کے سیاسی اور فرقہ وارنہ نعرے بازی یا ایسی کسی سرگرمی میں حصہ لینے کا کوئی جواز نہیں۔بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ حج کے دوران حجاج کرام کا سب سے بڑا مقصد عبادت، قرب الٰہی، معصیت سے اجتناب اور اطاعت خدا وندی ہے۔ حج پوری مسلم امہ کی وحدت کی علامت ہے اور حج کے شعائر کی ان کی روح کے مطابق ادائی ہر حاجی کی دینی ذمہ داری ہے۔قبل ازیں سعودی عرب کابینہ نے بھی عازمین حج پر خود کو سیاسی نعرے بازے سے دور رکھنے پر زور دیتے ہوئے اپنی توجہ شعائر حج بیت اللہ پر مرکوز رکھنے کی اپیل کی تھی۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here