اب سامنے آئی جموں بس گرینیڈ حملے کے ماسٹر مائنڈ کی تصویر۔ فاروق احمد بھٹ

Share Article
farooq-ahamad-bhatt

جموں بس گرینیڈ حملے میں گرینیڈ پھینکنے والے یاسر بھٹ کی گرفتاری کے بعد اب اس حملے کے ماسٹر مائنڈ حزب المجاہدین کے کمانڈر فاروق احمد بھٹ کی تصویر سامنے آئی ہے۔ فوٹو میں فاروق رائفل لے کر دوسرے حزب المجاہدین دہشت گردوں کے ساتھ کالے رنگ کا پہرن پہنے کھڑا دکھائی دے رہا ہے۔ اس کے ساتھ کھڑے تمام دہشت گردوں کے ہاتھوں میں بھی جدید رائفلس ہیں۔ دہشت گرد فاروق حزب المجاہدین کا ڈسٹرکٹ کمانڈر ہے۔ اور اسی کے کہنے پر دہشت گرد یاسر بھٹ نے بس پر گرینیڈ پھینکا تھا۔آپ کو بتا دیں کہ 7 مارچ کو ہوئے اس حملے میں 2 افراد ہلاک جبکہ 30 سے لوگ زیادہ افراد زخمی ہو گئے تھے۔
farooq-ahamad-bhat
جموں کشمیر کے کولگام ضلع کا رہنے والا ہے فاروق
فاروق احمد بھٹ عرف نالی جموں کے کلگام کا رہنے والا ہے۔ اس نے سال 2015 میں حزب المجاہدین کو جوائن کیا تھا۔ وہ حزب المجاہدین میں اے گریڈ کا دہشت گرد ہے اور بس اسٹینڈ پر حملے کے بعد سے ہی جموں و کشمیر پولیس اس کی تلاش میں تھی۔فاروق کی جو تصویر سامنے آئی ہے، اس میں اوپر ’کلگام ٹائیگرز‘کیپشن لکھا ہوا ہے، جس سے یہ ماناجا رہا ہے کہ یہ سب دہشت گرد کلگام کے ہی رہنے والے ہیں۔

فاروق نے ہی دیا حملے کیلئے گرینیڈ
جموں بس اسٹینڈ پر گرینیڈ حملے میں گرفتار دہشت گرد یاسر بھٹ نے پولیس تفتیش میں انکشاف کیا کہ وہ حزب المجاہدین کا دہشت گرد ہے۔ یاسر بھٹ نے بتایا کہ فاروق احمد بھٹ نے ہی اسے حملے کو کہا تھا۔ اور اس نے ہی مجھے حملے کے لئے گرینیڈ دیا تھا۔ بتا دیں کہ گزشتہ دس ماہ میں جموں کے اس بس اسٹینڈ پر ہوا یہ تیسرا حملہ تھا۔ اس سے پہلے دسمبر 2018 میں یہاں دھماکہ ہوا تھا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *