امریکہ نے پاکستان کے ایف ۔16 طیاروں کی گنتی سے کیا انکار، ہندوستان کے دعوے پر لگی مہر

Share Article
aircraft

امریکہ نے فارن پالیسی میگزین میں پاکستان کے ایف ۔16 طیاروں کی گنتی سے منسلک رپورٹ کو سرے سے خارج کر دیا ہے۔ دراصل گزشتہ دنوں فارن پالیسی میگزین ایک رپورٹ میں دعوی کیا تھا کہ حال ہی میں امریکی افسروں نے پاکستان کے ایف ۔16 طیاروں کی گنتی کی ہے۔ رپورٹ کے مطابق پاکستان کے پاس امریکہ سے ملے سبھی ایف ۔16 طیارے موجود ہیں۔ اس رپورٹ کے بعد ہندوستانیفضائیہ کے ذریعے پاکستان کے ایف ۔16 لڑاکا طیارے کے مار گرائے جانے کے دعوے پر سوال کھڑے ہو گئے تھے۔

لیکن اب ایف ۔16 کو لے کر مچے بوال کے درمیان امریکہ نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے فارن پالیسی میگزین کے دعوے کی تردید کی ہے۔ امریکی محکمہ دفاع کا کہنا ہے کہ انہیں پاکستان کے ایف 16 طیاروں کی گنتی کے بارے میں اسے کوئی جانکاری نہیں ہے۔ پینٹاگون کے مطابق ایسی کسی بھی رپورٹ کو عوامی طور پر جاری نہیں کیا جاتا ہے۔ جس میں دو ممالک کی حکومتیں شامل ہوتی ہیں۔غورطلب ہے کہ جنوری 2018 سے، ریاستہائے متحدہ امریکہ کی حکومت نے پاکستان کو تحفظ مدد معطل کر دی ہے۔

وہیں دوسری طرف امریکی میگزین کی رپورٹ کے سامنے آنے کے بعد پاکستان نے ہندوستان پر ایف ۔16 طیارے مار گرانے کو لے کر جھوٹ بولنے کا الزام لگایا تھا۔حالانکہ ہندوستانی فضائیہ نے اسے سرے سے خارج کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس نے پاکستان کے ایف ۔16 طیارے کو مار گرایا تھا جس کے کافی ثبوت بھی پاس ہیں۔

ہندوستانی فضائیہ نے دعوی کرتے ہوئے کہا تھا کہ 27 فروری کو اس کے مگ ۔21 بائسن نے ایک پاکستانی ایف ۔16 طیارے کو نوشیرا سیکٹر میں مار گرایا تھا۔ اس دوران 27 فروری کو دو الگ الگ جگہوں پرایجیکشن دیکھے گئے تھے۔ جن کے درمیان آٹھ دس کلومیٹر کی دوری تھی۔ ان میں سے ایک ہندوستانی فضائیہ کا مگ ۔21 بائسن تھا اور ایک پاکستانی فضائیہ کا طیارہ ایف ۔16 تھا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *