لوک سبھاالیکشن :این ڈی اے اورمہاگٹھ بندھن کولیکرپپویادونے کہی بڑی بات

Share Article
pappu-yadav
جن ادھیکارپارٹی کے سربراہ ورکن پارلیمنٹ راجیش رنجن عرف پپویادو نے کہاکہ اگربہارمیں این ڈی اے کوہراناہے تولالوپرسادیادواوران کی پارٹی آرجے ڈی کوآگے آناہوگا۔اس کے چلتے مہاگٹھ بندھن کومضبوطی مل پائے گی اوروہ این ڈی اے کے خلاف مضبوطی سے لڑپائے گا۔پپویادونے کہاکہ ’فیملی پرائیویٹ لمٹیڈ ‘ سے اوپراٹھ کر لالوکی آرجے ڈی کوآگے آنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہاکہ ملک میں بہارایک ایسی ریاست ہے جہاں این ڈی اے مضبوط ہورہاہے۔پپویادو کامانناہے کہ این ڈی اے کوہراناہے تولالوپرساد کوآگے آناہی ہوگا۔ پیویادونے اشارے دےئے ہیں کہ وہ مدھے پورہ اورپورنیہ دونوں لوک سبھاحلقوں سے الیکشن لڑسکتے ہیں۔
پپو نے کانگریس کوملک کی سب سے بڑی پارٹی بتاتے ہوئے کہاکہ بی جے پی کا اثر آج صرف ہندی بولنے والے علاقوں میں ہے،جبکہ کانگریس ایک نیچرل پارٹی ہے جومشرق سے مغرب اورشمال سے جنوب تک مؤثرہے۔پپویادونے تین فروری کوپٹنہ میں کانگریس کی ہونے والی ریلی کواخلاقی حمایت دینے کی بات کہی۔یادونے لیڈروں کوبھارت رتن دئیے جانے کی مخالفت کرتے ہوئے کہاکہ نفرت، ریزرویشن ، ہندومسلمان کرنے والے لیڈروں کوبھارت رتن کیوں دیاجائے؟ انہوں نے سوال اٹھائے کہ سبھاش چندربوس، بھگت سنگھ، وویکانند، جھانسی کی رانی اورپیریارکوبھارت رتن کیوں نہیں دیاگیا۔جن ادھیکارپارٹی(جاپ) نے 26جنوری اور15اگست کے پروگرام میں ہونے والے خرچ کے آڈٹ کی مانگ اٹھائی اورکہاکہ وہ اس معاملے کولوک سبھامیں اٹھائیں گے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *