پاکستان: سیل ہوالاہور واقع جماعت الدعوۃ کا ہیڈکوارٹر، 120 دہشت گرد حراست میں

Share Article

pakistan-seals-jud

اسلام آباد : 26/11 ممبئی دہشت گردانہ حملے کا اہم ملزم اور ماسٹر مائنڈ حافظ سعید پر پاکستان جمعہ کی تقریر پر روک لگا دی ہے۔ اب حافظ سعید جماعت الدعوۃ کے ہیڈکوارٹر سے کوئی خطاب نہیں کر پائے گا، ایسا پہلی بار ہوا ہے جب پاکستان نے حافظ پر اتنی بڑی پابندی لگائی ہے۔

حافظ سعید کو کبھی بھی جمعہ کا خطاب دینے سے نہیں روکا گیا، اس دور میں بھی نہیں، جب مسجدقدسیہ کا کنٹرول پنجاب حکومت کے ہاتھوں میں تھا۔ پنجاب حکومت کے ایک سینئر افسر نے پی ٹی آئی سے کہا،’پنجاب پولیس نے جامعہ مسجد قدسیہ کو سیل کر دیا ہے۔ حافظسعید کو جمعہ کو اپنا ہفتہ وار خطاب دینے کے لئے احاطے میں گھسنے نہیں دیا جائے گا۔‘

pakistan-seals-jud-1

انہوں نے کہا، ’ سعید نے پنجاب حکومت سے اسے قدسیہ مسجد میں جمعہ کو خطاب دینے کی اجازت دینے کی درخواست کی لیکن درخواست ٹھکرا دیا گیا۔یہ سعید کے اثرات کو دیکھتے ہوئے بڑا اہم مانا جا رہا ہے کیونکہ پہلی بار حکومت نے اسے تقریرکرنے سے منعکیا ہے۔‘

پاکستان انتظامیہ نے ممنوعہ تنظیموں پر موجودہ کارروائی کے تحت جمعرات کو جے یو ڈی اور ایف آئی ایف کے کوارٹر کو سیل کر دیا اور120 سے زائد دہشت گردوں کو حراست میں لے لیا۔ پنجاب کے محکمہ داخلہ نے جمعرات کو جاری بیان میں کہا،’قومی ایکشن پلان (این اے پی) کے تحت حکومت نے لاہور اور مریدکے میں جییو ڈی اور ایف آئی ایف کے کوارٹر کو مکمل طور پر اپنے کنٹرول میں لے لیا ہے۔‘

محکمہ نے کہا کہ حکومت صوبے میں ممنوعہ تنظیموں کی مساجد، مدارس اور دیگر اداروں کا کنٹرول اپنے ہاتھوں میں لے رہی ہے۔بیان کے مطابق،’ہم نے ممنوعہ تنظیموں کے خلاف کارروائی تیز کر دی ہے۔‘

افسر نے کہا، ’پنجاب حکومت نے جے یو ڈی کے مریدکے ہیڈکوارٹر اور لاہور میں دو دفاتر میں کم از کم چھ ایڈمنسٹریٹر مقرر کئے ہیں۔‘ افسر نے بتایا کہ حکومت نے لاہور سے تقریباً 40 کلومیٹر دور مریدکے واقع جییو ڈی کے ہیڈ کوارٹر پر بھی مکمل کنٹرول کرلیا ہے۔حالانکہ محکمہ داخلہ نے اس کی تصدیق نہیں۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ انتظامیہ اور پولیس کے افسران جب عمارت کا کنٹرول اپنے ہاتھوں میں لینے کے لئے وہاں پہنچے تو سعید اور ان کے حامیوں نے کوئی مخالفت نہیں کی۔ انہوں نے کہا،’ اپنے حامیوں کے ساتھ سعید جوہرٹاؤن واقع اپنے رہائش کے لئے روانہ ہو گیا۔‘

سعید پر دسمبر 2008 میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے پابندی لگائی تھی۔ اسے نومبر 2017 میں پاکستان میں حراست سے رہا کیا گیا تھا۔ امریکہ نے اسے جون 2014 میں غیر ملکی دہشت گرد قرار دیا تھا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *