ابھی تک صرف پانچ ہندوستانی ہی جیت سکے ہیں آسکر ایوارڈ، دیکھیں تصاویر

Share Article

 

 

ممبئی: ساری دنیا کی نظر ہالی ووڈ کے ڈالبي تھیٹر میں آسکر ایوارڈ تقریب پر Oscar Awards 2019 ہے. 91 ویں اکیڈمی اورڈس، 91st academy awards تقریب سے ایک اچھی خبر یہ آئی ہے کہ اتر پردیش کے ہاپوڑ ضلع کے کاٹھی کھیڑا گاؤں کی رہنے والی لڑکی پیار پر بنی مختصر فلم ‘پیریڈ اینڈ آف سیٹنس‘ کو سب سے بہتر ڈاکومنٹری شارٹ کٹیگری فلم کے لیے آسکر ایوارڈ 2019 ملا ہے۔

 

بہرحال، اس خبر کے درمیان آج ہم آپ کو آپ کے ملک کے ایسے پانچ نام بتا دیتے ہیں، جنہوں نے آسکر جیت لیا ہے۔ اس لسٹ میں سب سے پہلے نام آتا ہے- بھانو اتھيا کا، جنہوں نے سال 1983 میں جان مولو کے ساتھ ‘گاندھی فلم میں سب سے بہتر کاسٹیوم ڈیزائن کے لئے آسکر جیتا تھا۔

 

ماہر فلم ساز ستیہ جیت رے کو 1991 میں هونرےري اکیڈمی ایوارڈ ملا تھا۔ ستیہ جیت رے کی اپنے ملک میں ہی نہیں بلکہ پوری دنیا کے سنیما پر بھی ایک گہرا اثر رہا ہے۔ انہیں سنیما میں اعزازی ‘لائف ٹائم اچیومنٹ آسکر ملا تھا۔ رے ان دنوں بیمار تھے، ان کے لئے آسکر ایوارڈ کھل چل کر کولکاتہ آیا

 

ایک نام ہے ریسل پوكٹي کا۔ ریسل پوكٹي کو سال 2008 میں فلم ‘Slumdog ایس ایس کے لئے سب سے بہتر آواز مکسنگ کا آسکر ایوارڈ مل چکا ہے۔

 

اسی فلم ‘Slumdog ایس ایس کے لئے اے آر رحمن کو سال 2008 میں ہی ‘جے ہو، کے لئے دو آسکر، بہترین موسیقی اور بہترین گیت (مشترکہ طور پر) مل چکا ہے۔

 

گلزار کو ‘Slumdog ایس ایس کے لئے ہی بہترین گیت کا آسکر ملا اگرچہ، گلزار صاحب خود وہاں ایوارڈ لینے موجود نہیں تھے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *