نواز گرلز پبلک اسکول میں سالانہ پروگرام’پرواز‘ منعقد

Share Article
Nawaz-Girls-Public
معروف عصری ادارہ نواز گرلز پبلک اسکول میں آج سالانہ پروگرام ’پرواز‘ نہایت شاندار اورروایتی انداز میں منعقد ہوا ،جس میں ممتاز شخصیات نے شرکت کرکے تعلیم نسواں کی اہمیت و ضرورت پر روشنی ڈالی۔ پروگرام میں ادارہ کی طالبات نے خوبصورت انداز میں ثقافتی اور حب الوطنی پر مبنی پروگرام پیش کرکے حاضرین کو خوب محظوظ کیا۔ پروگرام کی صدارت آئی اے ایس غزل باردھواج نے کی جبکہ مہمان خصوصی کے طور پر صحافی سُمیرا خان ،ایس ڈی پبلک اسکول مظفرنگر کی پرنسپل چنچل سکسینا ،براؤن ووڈ پبلک اسکول سہارنپور کی ڈائریکٹر صبوحی افتخار نے شرکت کی۔
اس موقع پر مہمان خصوصی سُمیرا خان نے کہاکہ ادارہ کی طالبات نے جو پروگرام پیش کئے وہ واقعی میں کافی دلچسپ اور متاثر کن ہے۔ انہوں نے کہاکہ میں چاہتی ہوں کہ یہ بچیاں صحافت کے میدان میں اپنی شناخت بنائیں کیونکہ یہ بھی سماج کی ایک بڑی ضرورت ہے ،اس سے سماج کی ضرورت پوری ہوگی ،خاص طورپر طالبات کے لئے روزگار مہیا ہوگا اور سماج میں ان کے رتبہ میں اضافہ ہوگا۔ آئی اے ایس آفیسر غزل بھاردواج نے کہاکہ آج کا دور مقابلہ کادور ہے ،اسلئے سبھی بیٹیوں کو زمانہ کی رفتار کے ساتھ آگے بڑھنا چاہئے ،ایسا کوئی میدان نہیں جس میں لڑکیاں کامیاب نہ ہوسکیں ،انہوں نے کہاکہ اگر کسی کام کو وقت کے مطابق منصوبہ بند طریقہ سے کیا جائے تو کامیابی یقینی طورسے ان کے قدم چومے گیں۔انہوں نے کہاکہ آنے والا دور بیٹیوں کا ہی ہوگا ،بیٹیوں کے لئے تعلیمی نظام کرکے اسکول کے سرپرست و بانی ڈاکٹر نواز دیوبندی نے واقع ہی ایک بہت ہی ضروری اور اچھی شروعات کی ہے جس کے لئے وہ مبارکباد کے مستحق ہیں۔
محترمہ پونم مشرا نے اپنے خیالات کااظہا رکرتے ہوئے کاکہ آج زمانہ بدل چکاہے آج کی بیٹیوں کو صرف گھریلو ہی نہیں بلکہ ایک اچھا آفیسر بن کر سماج کی خدمت کرن چاہئے اور اس کے لئے ہماری بیٹیوں کو آئی اے ایس، آئی پی ایس ،ڈی ایم ،ایس ڈی ایم اور جج وغیرہ بن کر سماج اور انسانیت کی خدمت کرنی چاہئے تبھی ملک ترقی کریگا۔ صبوحی افتخار نے اپنے خطاب میں کوالٹی ایجوکیشن پر روشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ کلاس میں بچہ کا سیکھنا سب سے زیادہ اہمیت رکھتاہے اسے اپنی بات کو خود اعتمادی کے ساتھ ،بے جھجک ہوکر رہنے کا موقع ملتاہے ،جس سے اسے زندگی کے مختلف میدانوں میں آگے بڑھنے کی تربیت ملتی ہے۔

 

محترمہ چنچل سکسینا نے کہاکہ ہمارا مقصد صرف تعلیم حاصل کرنا ہی نہیں بلکہ سماج کو پڑھانا بھی ہونا چاہئے، ہماری بیٹیاں کو سائنس کی جانب توجہ دیتے ہوئے اپنی زندگی کو بہتر بناتے ہوئے آگے بڑھانا چاہئے کیونکہ اس کے بنا سماج میں ترقی کرنا ناممکن ہے۔اس موقع پر اسکول کے بانی و معروف شاعر ڈاکٹر نواز دیوبندی نے کہاکہ لڑکیوں کا تعلیم یافتہ ہونا سماج کی بنیاد ہے، اس پر زیادہ سے زیادہ توجہ دینے اور کام کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہاکہ میری خواہش ہے کہ آج ہماری بیٹیاں تکنیکی تعلیم کے میدان میں بڑھ چڑھ حصہ لیں۔ اس دوران نواز دیوبندی نے فری پے کلاس اور فری انگلش کورس کا اعلان بھی کیا۔انہوں نے کہاکہ فری پلے کلاسس کا مقصد اپنی بیٹیوں کو خوشی خوشی آنے جانے کا عادی بناناہے اور بین الاقوامی سطح پر انگریزی زبان کی ضرورت کو دیکھتے ہوئے ہندوستانی زبان کے ساتھ ساتھ انگریزی زبان میں بھی مہارت حاصل ہونی چاہئے۔ انہوں نے کہاکہ ہمارا مقصدتعلیم ہے تجارت نہیں ہے۔ انہوں نے کہاکہ اگر کسی کے ماں باپ نہ ہوں تو ادارہ اس کو اپنی بیٹی بناکر اس کو مفت تعلیم دینے کا نظم کریگا۔ پروگرام کا ختتام حب الوطنی کے ترانوں کے ساتھ ہوا۔ اس موقع پر کثیر شہر کی خواتین نے شرکت کی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *