نتیش کی چندرابابوسے بات چیت پرسیاسی ہلچل

Share Article
nitish
ابھی حال میں نتیش کمار کی چندرابابو نائیڈو سے فون پرہوئی بات چیت سے سیاسی حلقوں میں زبردست ہلچل مچ گئی ہے۔ اس کا سیدھا مطلب یہ نکالا جارہاہے کہ نتیش نے اپنے کارڈ یا متبادل کھلے رکھے ہیں۔
جنتادل یونائٹیڈ (جے ڈی یو) اوربھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی) ودیگر پارٹیوں پرمشتمل این ڈی اے کے وزیراعلیٰ نتیش کمار نے آندھرا پردیش وزیرعلیٰ چندرابابونائیڈ و جوکہ ان دنوں 2019کے عام انتخابات کیلئے بی جے پی قیادت والے این ڈی اے کے اپوزیشن پارٹیوں کومتحدکرنے کی کوششوں میں لگے ہوئے ہیں، سے فون پرلمبی گفتگو کرکے سبھی کوچونکادیاہے۔
گرچہ یہ کسی کونہیں معلوم کہ دونوں منجھے ہوئے سیاسی کھلاڑی کے درمیان آخرکیا بات چیت ہوئی ۔مگر ایک ایسے وقت جب تیلگو دیشم پارٹی (ٹی ڈی پی) سربراہ چندرابابونائیڈو نے 10دسمبر کوغیربی جے پی سیاسی پارٹیوں کے لیڈروں کا نئی دہلی میں اجلاس بلایاہے، نتیش کمار کانائیڈو سے بات کرنا سب کا کان کھڑا کردیتاہے۔
اس تعلق سے سیدھا سوال سیاسی حلقوں میں یہ پوچھا جارہاہے کہ کیا نتیش کمار بی جے پی سے سیٹ شیئرنگ کے ایشوپرمطمئن نہیں ہیں اورکیا وہ بی جے پی مخالف اتحاد میں شامل ہونے کوسوچنے لگے ہیں؟نیزکیا تیجسوی یادو انہیں آسانی سے قبول کریں گے؟
سیاست میں کچھ بھی ناممکن نہیں ہے۔جب نتیش کی نائیڈو سے گرم سیاسی ماحول میں بات چیت ہوسکتی ہے، تب کچھ بھی ہوسکتاہے۔سیاسی مبصرین نے اس پر اٹکلیں لگانی شروع کردی ہیں۔دیکھئے آگے آگے کیا ہوتاہے۔ویسے 11دسمبرکو پارلیمنٹ سیشن شروع ہونے سے ایک روزقبل بی جے پی مخالف پارٹیوں کا راجدھانی میں اجلاس کامنعقد کیا جانا بہت اہم اورغیرمعمولی ہے جبکہ اسمبلی انتخابات کے نتائج کا بھی 11دسمبرکوہی اعلان ہوتاہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *