دیکھیں ویڈیو:کیمرے پر قید ہوا حملہ آور، فیس بک پر لائیو ہوکر مسجد میں کر رہا تھا فائرنگ

Share Article

new-zealand-shooting

فائرنگ میں اب تک 27 لوگوں کی موت ہو چکی ہے

نیوزی لینڈ کا کرائسٹ چرچ شہر جمعہ صبح اس وقت دہل اٹھا جب یہاں کی دو مسجد میں کچھ مسلح افراد نے فائرنگ کر دی۔ یہ فائرنگ اس وقت ہوئی جب 300 سے زیادہ لوگ یہاں نماز ادا کرنے کے لئے آئے تھے۔ نیوزی لینڈ کی لوکل میڈیا کے مطابق، اب تک 27 لوگوں کی موت ہو چکی ہے۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ اچانک مسجد سے چیخ وپکار کی آواز آنے لگی۔ شوٹر گولیاں داغتے ہوئے مسجد میں آ گھسا اور لوگوں کو مار ڈالا۔ مسجد اور سڑکوں پر جگہ جگہ لاشیں اور خون بھکرا ہوا دکھائی دیا۔

فیس بک پر لائیو آکر کر رہا تھا فائرنگ

 

نیوزی لینڈ ہیرالڈ کے مطابق، حملہ آور نے فوجی وردی پہن رکھی تھی اور اس نے دو میگزین گولی فائر کی۔ اس نے اس کا ویڈیو بھی بنایا۔ حملے سے پہلے اس نے 37 صفحات کی ایک مینی فیسٹو بھی جاری کیا تھا۔ اس مینی فیسٹو میں حملہ آور نے لکھا، میں مسلمانوں سے نفرت نہیں کرتا ہوں، لیکن ان مسلمانوں سے نفرت کرتا ہوں جو ہماری زمین پر قبضہ کر رہے ہیں اور تبدیلی مذہب کرارہے ہیں۔‘

17 منٹ تک بنایا لائیو ویڈیو

new-zealand-shooting--1

نیوزی لینڈ کی میڈیا کے مطابق، کرائسٹ چرچ کے مساجد میں فائرنگ کا مسلح شخص نے 17 منٹ تک لائیو ویڈیو بنایا۔ مسلح شخص کی شناخت بریٹن ٹیرنٹ کے طور پر ہوئی ہے۔ 28 سالہ بریٹن ٹیرنٹ آسٹریلیا کا رہنے والا ہے۔ مسلح شخص نے پہلے ڈین ایونیو میں ا لنور مسجد کے پاس اپنی گاڑی پارک کی۔ اس کے بعد اس نے بندوق نکالا اور مسجد میں گھستے ہی اندھا دھند فائرنگ کرنے لگا۔ بتایا جا رہا ہے کہ وہ آرمی کا لباس پہنا تھا اور اس نے قریب دو میگزین فائرنگ کی۔ اس کی گاڑی میں کئی ہتھیار پڑے ہوئے تھے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *