نیوزی لینڈ کی مسجد میں فائرنگ 6 افراد ہلاک، بال بال بچے بنگلہ دیشی کرکٹ کھلاڑی

Share Article

new-zealand-mosques-f

نیوزی لینڈ کے ساؤتھ آئی لینڈ سٹی کی ایک مسجد میں فائرنگ کی خبرہے۔ واقعہ جمعہ کا ہے۔ اطلاع ملتے ہی پولیس موقع پر پہنچ گئی۔ پولیس پورے معاملے کی جانچ کر رہی ہے۔ مقامی میڈیا نے بتایا کہ اس میں کچھ لوگوں کی جانیں گئی ہیں اور باقی لوگوں کے بارے میں پتہ لگایا جارہا ہے۔ ایک چشمدید نے بتایا کہ مسجد میں فائرنگ کی وجہ سے کافی لوگوں کی جانیں چلی گئی ہیں۔

حالانکہ ابھی تک پولیس نے یہ نہیں بتایا ہے کہ اس واقعے میں کتنے لوگوں کی جان گئی ہے لیکن سینٹرل کرائسٹ چرچ میں انتظامیہ نے لوگوں کو گھر کے اندر رہنے کو کہا ہے۔

اس دوران پولیس نے سینٹرل کرائسٹ چرچ کو چاروں طرف سے گھیر لیا ہے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق اس میں کئی لوگوں کے مارے جانے کا خدشہ ہے۔ چشم دیدوں نے بتایا کہ کرائسٹ چرچ میں آل نور مسجد کے قریب گولی چلانے کی آواز سنی گئیں۔ پولیس نے لوگوں سے اس علاقے میں جانے سے منع کیا ہے۔

بنگلہ دیش کی کرکٹ ٹیم نیوزی لینڈ کے دورے پر ہے۔ بنگلہ دیش کی کرکٹ ٹیم کو کوئی نقصان نہیں پہنچا ہے، لیکن اس واقعہ کے بعد سے ٹیم جلد سے جلد نیوزی لینڈ چھوڑ دینا چاہتی ہے۔ بنگلہ دیشی کرکٹ کرائسٹ چرچ میں ہی تھی اور کل نیوزی لینڈ سے ٹیسٹ میچ تھا۔ بنگلہ دیش کے کھلاڑی نماز کے لئے مسجد پہنچے تھے، لیکن اسی دوران وہاں ایک مسلح شخص نے اچانک گولی چلانی شروع کر دی، حالانکہ اس واقعہ میں کسی کھلاڑی کو چوٹ نہیں آئی ہے اور تمام محفوظ ہیں۔

جائے حادثہ پر موجود کرک انفو کے بنگلہ دیشی صحافی محمد اسام نے بتایا کہ تمام کھلاڑی محفوظ ہیں، لیکن تمام لوگوں کو واپس بنگلہ دیش واپس جانا چاہتے ہیں۔

حالانکہ، ابھی تک پولیس نے یہ نہیں بتایا ہے کہ اس معاملے میں کتنے لوگوں کی جان گئی ہے، لیکن مرکزی کرائسٹ چرچ میں انتظامیہ نے لوگوں کو گھر کے اندر رہنے کو کہا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *