نیوزی لینڈ: 2 مساجد پر دہشت گردانہ حملہ، ہلاکتوں کی تعداد 49 پہنچی

Share Article
nz-attack

نیوزی لینڈ کا کرائسٹ چرچ شہر جمعہ صبح اس وقت دہل اٹھا جب یہاں کی دو مسجد میں کچھ مسلح افراد نے فائرنگ کر دی۔ یہ فائرنگ اس وقت ہوئی جب 300 سے زیادہ لوگ یہاں نماز ادا کرنے کے لئے آئے تھے۔ میڈیارپورٹس کے مطابق، نیوزی لینڈ کے کرائسٹ چرچ شہر کی دو مسجدوں میں اندھادھند فائرنگ کرنے والے حملہ آوروں میں اہم حملہ آور کی شناخت ہوگئی ہے۔ حملہ آور کی شناخت 28 سالہ برینٹن ٹیرنٹ کے طور پر ہوئی ہے۔ اس حملہ میں اب تک کم سے کم 49 لوگوں کی موت ہوگئی ہے جبکہ 48 سے زیادہ افراد زخمی بتائے جارہے ہیں۔

نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں دو مساجد میں فائرنگ سے49 افراد جاں بحق ہوگئے۔امریکی خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس ’اے پی‘ کی رپورٹ کے مطابق فائرنگ کا واقعہ دوپہر میں نماز جمعہ کے وقت پیش آیا۔پولیس حکام کے مطابق 4 افراد کو حراست میں لیا جاچکا ہے جن میں 3 مرد اور ایک خاتون شامل ہے، حملے کے بعد پولیس نے پورے علاقے کا کنٹرول سنبھال کر کرفیو نافذ کردیا۔ فائرنگ کی اطلاع ملتے ہی پولیس نے علاقہ اپنے گھیرے میں لے لیا اور مکینوں کو بھی گھروں سے نہ نکلنے جبکہ کسی بھی مشتبہ سرگرمی کی اطلاع فوراً پولیس کو دینے کی بھی ہدایت کی گئی۔ اس کے علاوہ خطرے کے پیشِ نظر نماز کی ادائیگی کے لیے لوگوں کو مساجد نہ جانے کا بھی کہا گیا، اس حوالے سے پولیس حکام کا کہنا تھا کہ ہم اپنے بھرپور صلاحیت کے ساتھ صورتحال پر قابو پانے کی کوشش کررہے ہیں۔اس بارے میں پولیس کمشنر مائیک بش نے بتایا کہ فائرنگ کے واقعہ کے بعد حالات کے پیشِ نظر شہر کے تمام اسکولوں کو بند کردیا گیا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *