این سی بی نے دہلی اورنوئیڈاکی یونیورسٹیوں کے 4طلباکوڈرگس کے معاملے میں گرفتارکیا

Share Article
arrest-students
ویسے ملک بڑے پیمانے پرلوگ نشے کے جال پھنسے ہوئے ہیں ،یہ کسی سے پوشیدہ نہیں ہیں۔لیکن عام لوگوں کے ساتھ ساتھ دہلی طلبابھی نشے کے جال پھنستے جارہے ہیں۔ نارکوٹکس کنٹرول بیورو(این سی بی)نے 1.140کلوڈرگس کے ساتھ 4طلبا کوگرفتار کیاہے۔گرفتارطلبامیں سے دودہلی یونیورسٹی(ڈی یو) کے ہندوکالج، ایک جواہرلال نہرویونیورسٹی( جے این یو)اورایک امیٹی یونیورسٹی کا طلبہ ہے۔بتایاجارہاہے کہ پچھلے کچھ مہینوں سے این سی بی ،دہلی زونل یونٹ کواس سے متعلق لگاتارجانکاری مل رہی تھی۔
بتایاجارہاہے کہ این سی بی کومشہوریونیورسٹیوں جیسے دہلی یونیورسٹی، جواہرلال نہرو اورامیٹی یونیورسٹی کے پاس ڈرگس کی غلط استعمال کی خبرمل رہی تھی،لیکن اس متعلق کوئی ٹھوس جانکاری نہیں مل پارہی تھی۔این سی بی کے ڈی جی رینامترانے یونیورسٹی احاطے میں طلبامیں ڈرگس کے بڑھتے اثرات پرتشویش کا اظہارکیا اوردہلی زونل یونٹ کواس متعلق میں سخت نگرانی رکھنے کیلئے حکم دےئے۔
پولس نے ملی جانکاری کے مطابق، یہ طلبانئے سال کی پارٹی کی تیاری کررہے تھے اوریہ ڈرگس اسی جشن کیلئے منگائی گئی تھی۔پولس اس بات کاپتہ لگانے میں ہے کہ طلباکسی گروہ سے منسلک ہیں یاپھرڈرگس نجی استعمال کیلئے لائے گئے تھے۔واضح ہوکہ نئے سال پرنشے کے استعمال کوروکنے کیلئے پولس خصوصی مہم چلائے ہوئے ہیں۔جگہ جگہ تلاشی لی جارہی ہے۔گاڑیوں کوروک ان کی جانچ کی جارہی ہے۔
بہرکیف این سی بی دہلی کوجانکاری ملی تھی کہ آنے والے نئے سال کے جشنوں کیلئے ڈی ٹی ڈی سی کورےئرکے ذریعہ سے تین ایل ایس ڈی بلوٹ بھیج دےئے جائیں گے۔اطلاع ملنے پراین سی بی دہلی کی ٹیم وجے نگرمیں ڈی ٹی ڈی سی آفس پہنچی اورتین ایل ایس ڈی بلوٹ کوضبط کیا۔این سی بی کی کارروائی میں 1.18کلومنشیات کوگوروکماراورتین دیگرلوگوں سے ضبط کیاگیا۔جن تین اورلوگوں کوگرفتارکیاان کے نام سیم ملک،انرود ماتھوراورتینزن فونوگ ہیں۔تفتیش میں انہو ں نے بتایاکہ وہ جواہرلال نہرویونیورسٹی ، امیٹی یونیورسٹی اوردہلی یونیورسٹی کے ہندوکالج کے طلباہیں ۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *