قومی بجٹ سے مارکیٹ میں بھونچال، 2 دن میں ڈوبے 5 لاکھ کروڑ

Share Article

گھریلو شیئر بازار میں پیر کے روز بکوالی کے زبردست دباو¿ میں سنسیکس گزشتہ سیشن کی کلوزنگ سے 792.82 پوائنٹ یعنی 2.01 فیصد گراوٹ کے ساتھ 38720.57 پر بند ہوا۔ نفٹی بھی 252.55 پوائنٹ یعنی 2.14 فیصد گراوٹ کے ساتھ 11558.60 پر بند ہوا۔ اس سے پہلے کاروبار کے دوران سنسیکس 900 پوائنٹ سے زیادہ گرا اور این ایس ای کے اہم انڈیکس نفٹی میں بھی 288 پوائنٹ کی گراوٹ آئی۔ عام بجٹ پیش ہونے کے بعد لگاتار دوسرا کاروباری دن ہے جب شیئر بازار اتنا پست ہوا ہے۔ ان دو دنوں میں سنسیکس تقریباً 1200 پوائنٹ ٹوٹا ہے تو وہیں نفٹی 400 پوائنٹ نیچے چلا گیا ہے۔ وہیں ان دو دنوں میں سرمایہ کاروں کے 5 لاکھ کروڑ روپے سے زیادہ ڈوب گئے ہیں۔

 

پیر کو صبح سے ہی شیئر مارکیٹ میں گراوٹ دیکھنے کو مل رہی ہے۔ پہلے گھریلو شیئر بازار میں بکوالی کے زبردست دباو¿ میں پیر کو بنچ مارک شیئر انڈیکس سنسیکس 500 پوائنٹ سے زیادہ نیچے آ گیا تھا۔ این ایس ای کے اہم انڈیکس نفٹی میں بھی شروعاتی کاروبار میں 1.31 فیصد کی گراوٹ درج کی گئی۔ بمبئی اسٹاک ایکسچینج کے 30 شیئروں پر مبنی انڈیکس سنسیکس 11.45 بجے گزشتہ سیشن سے 581.21 پوائنٹس یعنی 1.30 فیصد گر کر 38932.18 پر کاروبار کر رہا تھا۔ اس سے پہلے سنسیکس 39000 کے نفسیاتی سطح سے نیچے گر کر 38999.50 پر آ گیا جب کہ سیشن کے شروع میں سنسیکس معمولی گراوٹ کے ساتھ 39476.38 پر کھلا تھا۔

 

نیشنل اسٹاک ایکسچینج کے 50 شیئروں پر مبنی انڈیکس نفٹی بھی 186.85 پوائنٹس یعنی 1.56 فیصد کی زبردست گراوٹ کے ساتھ 11624.30 پر کاروبار کر رہا تھا جب کہ اس سے پہلے نفٹی 11647.75 تک گرا۔ سیشن کے شروع میں نفٹی بھی پچھلے سیشن کے مقابلے کمزوری کے ساتھ 11770.40 پر کھلا اور 11771.90 تک اٹھا مگر، بکوالی کا دباو¿ بڑھنے کے سبب انڈیکس نیچے آ گیا۔امریکہ میں پچھلے ہفتہ جاب ڈاٹا مضبوط آنے سے امریکی سنٹرل بینک فیڈرل ریزرو کے ذریعہ شرح سود میں تخفیف کا امکان کم ہونے سے ایشیائی بازاروں میں منفی رجحان رہا۔ اس کے علاوہ گزشتہ ہفتہ جمعہ کو پارلیمنٹ میں پیش کیے گئے عام بجٹ 20-2019 کے فیصلوں کو لے کر سرمایہ کاروں میں کشمکش کی حالت برقرار ہے، جس سے شیئر بازار میں منفی رجحان دیکھنے کو ملا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *