مظفر پور شیلٹر ہوم کیس: لڑکیوں کو گھر والوں سے ملوانے پر سپریم کورٹ کل دے گا حکم

Share Article
Muzaffarpur Shelter Home Case: SC orders tomorrow to rub up girls with family

مظفر پور شیلٹر ہوم معاملے میں لڑکیوں کو گھر والوں کے ساتھ ملوانے کو لے کر سپریم کورٹ کل یعنی 12 ستمبر کو حکم جاری کرے گا۔ آج (بدھ کو) ٹاٹا انسٹی ٹیوٹ آف سوشل سائنسز نے 24 لڑکیوں کی بازآبادکاری کے امکانات کو لے کر سپریم کورٹ میں اسٹیٹس رپورٹ سونپی ہے۔ اس رپورٹ پر چائلڈ ویلفیئر کمیٹی اور بہار حکومت کل یعنی 12 ستمبر کو جواب دے گی ۔

گزشتہ 18 جولائی کو سپریم نے ٹاٹا انسٹی ٹیوٹ آف سوشل سائنسز کو ہدایت دی تھی کہ وہ شیلٹر ہوم میں جنسی استحصال و زیادتی کی شکار تمام 44 لڑکیوں کے بحالی کا منصوبہ تیار کریں۔ کورٹ نے ٹاٹا انسٹی ٹیوٹ آف سوشل سائنسز کو ہدایت دی تھی کہ وہ اس کے بارے میں چار ہفتے میں رپورٹ داخل کریں۔

سماعت کے دوران عدالت نے سی بی آئی کو بھی چار ہفتے میں اسٹیٹس رپورٹ دائر کرنے کی ہدایت دی تھی۔ گزشتہ تین جون کو عدالت نے سی بی آئی کو ہدایت دی تھی کہ وہ اس معاملے کی جانچ تین ماہ میں مکمل کرے۔ سپریم کورٹ نے کہا تھا کہ تین ماہ میں بچیوں کے قتل، غیر فطری جنسی استحصال، شیلٹر ہوم میں آنے والے باہر کے لوگوں کے رول جیسے پہلوؤں کی تفتیش مکمل کریں۔ کورٹ نے سی بی آئی سے کہا تھا کہ تعزیرات ہند کے تحت ریپ کے الزامات، جنسی استحصال کی ویڈیو ریکارڈنگ کی بھی جانچ کرے۔

گزشتہ تین مئی کو سماعت کے دوران سی بی آئی نے حلف نامہ دائر کر کہا تھا کہ وہ اہم ملزم برجیش ٹھاکر اور دوسرے ملزمان کے ذریعہ قتلکی گئی 11 بچیوں کے معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے۔ سی بی آئی نے کہا تھا کہ اس نے ایک شریک ملزم کی نشاندہی پر شمشان گھاٹ میں ہڈیوں کے گٹھرملا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *