بارگرلس پر لاکھوں اڑانے والوں کو عدالت نے سنائی سخت سزا

Share Article

mumbai-dance-bar

 

ممبئی: ممبئی پولیس نے جب تاڑدیو علاقے کے انڈیانا بار میں ریڈ ڈالی تو ان کی بھی آنکھیں پھٹی رہ گئیں۔ فلور پر بار بالائیں ناچ رہی تھیں اور لوگ ان پر لاکھوں روپے اڑا رہے تھے۔ پولیس نے بار سے پیسہ اڑا رہے 47 افراد کو گرفتار کیا تھا۔ جب پولیس نے گرفتار تمام ملزمان کو ممبئی کی ہالیڈیڈ کورٹ پیش کیا تھا، جہاں عدالت نے انہیں عجیب سزا سنائی، تمام ملزمان کو ضمانت کے ساتھ ساتھ عدالت نے ہدایت دی وہ بدلاپور کے ایک یتیم خانے میں پیسہ بھریں گے اور ہفتے میں ایک دن جاکر خدمت بھی کریں گے ۔ عام طور پر ضمانت کے طور پر جمع کیا گیا پیسہ سرکاری خزانے میں جاتا ہے۔

کیا ہے پورا معاملہ:

mumbai-dance-bar-1

 

ممبئی پولیس کہ سوشل سروس برانچ نے ہفتہ (23 مارچ) کی رات کو انڈیانا بار اور ریستوران میں ریڈ مار کر 47 افراد کو گرفتار کیا۔ پولیس نے تمام ملزمان کو لڑکیوں پر پیسے لوٹاتے ہوئے پکڑا تھا۔ بار سے پولیس نے لاکھوں روپے بھی برآمد کیے تھے جو بار گرلس پر اڑائے گئے تھے، جس کے بعد پولیس نے گرفتار تمام ملزمان کو اتوار کی دوپہر مجسٹریٹ سبینا ملک کے سامنے پیش کیا گیا۔ مجسٹریٹ سبینا ملک ان سب کو کچھ ایسی سزا دینا چاہتی تھیں جس سے انہیں سبق مل سکے اور وہ دوبارہ ایسی غلطی نہ کریں۔

مجسٹریٹ ملک کا ماننا تھا کہ ملزمان کو توبہ کرنے کے لئے سلاخوں کے پیچھے کم از کم ایک دن گزارنا ہوگا تاکہ ان کے پریوار ان کی طرف سے کئے گئے جرم کی نوعیت کو سمجھ سکیں۔ بتا دیں کہ ملزمان میں بارمنیجر، ملازم اور گاہک شامل تھے، واضح رہے کہ زیادہ تر گاہک لوکل تھے لیکن کچھ گجرات اور مدھیہ پردیش کے بھی تھے۔

پہلے تو عدالت نے کسی بھی ملزم کو ضمانت نہیں دی لیکن جب ملزمان کے وکلاء نے ایسا نہ کرنے کی دہائی دی تو عدالت نے ان کی بات مانی اور نئے طریقہ سے انہیں سبق بھی سکھایا۔ مجسٹریٹ نے ملزمان کو بدلاپور کے ستکرما بالکا آشرم کو چنا اور اپنے حکم میں کہا کہ تمام ملزم اس آشرم میں ایک دن خدمت کریں گے اور تمام ملزم کو 3,000 روپے یتیم خانے میں جمع کرنے کی ہدایت دی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *