حج اعلیٰ عہدیداروں کے ٹریننگ کیمپ میں نقوی کا خطاب

Share Article
naqvi
نئی دہلی:مرکزی وزیر برائے اقلیتی امور جناب مختار عباس نقوی نے آج یہاں کہا کہ حج سبسیڈی ختم کئے جانے کے باوجود اس بار سرکاری نظام سے جانے والے ہند وستانی عازمین حج کو ہوائی سفر کے لئے 57 کروڑ روپے کم دینا پڑے گا۔
نئی دہلی میں حج کوآرڈنیٹر، اسسٹنٹ حج آفیسر، حج اسسٹنٹ کے ٹریننگ کیمپ سے خطاب کرتے ہوئے جناب نقوی نے کہا کہ 2017 میں 1؍ لاکھ 24؍ ہزار 852؍ عازمین حج کے لئے 1030؍کروڑ روپے فضایے کمپنیوں کو ہوائی جہازمیں سیٹ کے طور پر دیے گئے تھے جبکہ 2018 میں حج کمیٹی آف انڈیا کے ذریعے جانے والے 1؍ لاکھ 28 ؍ہزار 702؍ حاجیوں کے لئے 973؍ کروڑ روپے دیے جائیں گے جو گزشتہ سال کے مقابلے 57 ؍کروڑ روپے کم ہے۔
نقوی نے کہا کہ اس سال حج کیلئے 3 ؍لاکھ 55؍ ہزار 604؍درخواستیں موصول ہوئی ہیں جن میں ایک لاکھ 89؍ ہزار 217 ؍مرد اور 1؍ لاکھ 66 ؍ہزار 387 ؍خواتین شامل ہیں۔ جناب نقوی نے کہا کہ بھارت سے پہلی بار 1308 مسلمان عورتیں ” بغیر محرم ” (مرد رشتہ دار) کے حج پر جا رہی ہیں۔ نقوی نے کہا کہ پہلی بار عازمین حج کو اپنے اصل امبارکیشن پوائنٹ کے علاوہ کسی ایک اور امبارکیشن پوائنٹ سے بھی جانے کی اجازت دی گئی ہے جس کے حوصلہ افزا نتائج سامنے آئے ہیں۔
مختارعباس نقوی نے کہا کہ حج سبسڈی ختم ہونے اور سعودی عرب میں مختلف نئے ٹیکس کے باوجود آزادی کے بعد پہلی بار سب سے زیادہ ہند وستانی مسلمان 2018 ؍میں حج کا سفر کریں گے۔ آزادی کے بعد پہلی بار، 1؍ لاکھ 75 ؍ہزار 25؍ ہندوستانی مسلمانوں کا 2018 میں حج پر جانا ایک ریکارڈ ہوگا۔ اس سال حج پر جانے والوں میں 47؍فیصد سے زائد خواتین کا شامل ہونا بھی ایک ریکارڈ ہے ۔ نقوی نے کہا کہ حج سبسڈی ختم ہونے اور سعودی عرب میں مختلف ٹیکسوں میں اضافے کے باوجود بھارت سے جانے والے عازمین پر کوئی ناجائز بوجھ نہیں پڑنے دیا جا رہا ہے۔
نقوی نے کہا کہ بھارت سے پہلی بار بڑی تعداد میں خواتین حج کوآرڈنیٹر، حج اسسٹنٹ ، پیرا میڈکس، ڈاکٹراورخادم الحجاجسعودی عرب میں حج انتظامات میں تعاون کرنے جا رہے ہیں۔ مجموعی طور پر98؍ خواتین اسسٹنٹ حج افسران، حج اسسٹنٹ، حج کوآرڈنیٹر، خواتین ڈاکٹر، خواتین پیرا میڈکس بھی سعودی عرب جا رہی ہیں۔ اس ٹریننگ کیمپ میں اقلیتی وزارت، وزارت صحت، وزارت شہری ترقیات وغیرہ کے نمائندوں نے ان حج اسسٹنٹ / کوآرڈنیٹر کو حج، حاجیوں کی صحت، نقل و حمل ، رہائش، سیکورٹی وغیرہ سے متعلق مختلف معلومات دیں۔
احمد آباد سے 6700، اورنگ آباد سے 350، بنگلور سے 5550، بھوپال سے 254، کوچین سے 11700، چنئی سے 4000، دہلی سے 19000، گیا سے 5140، گوا سے 450، گوہاٹی سے 2950، حیدرآباد سے 7600، جے پور سے 5500، کولکتہ سے 11610، لکھنؤ سے 14500، منگلور سے 430، ممبئی سے 14200، ناگپور سے 2800، رانچی سے 2100، سری نگر سے 8950، وارانسی سے 3250 لوگ اس سال حج پر جا رہے ہیں، جو اب تک کی ریکارڈ تعداد ہو جائے گی۔
14 جولائی، 2018 کو دہلی، گیا، گو ہا ٹی ، لکھنؤ اور سرینگر سے حج کے لئے پروازیں شرو ع ہورہی ہیں ۔ 17 جولائی 2018 کو کولکاتا سے، 20 جولائی کو وارانسی سے، 21 جولائی کو منگلور سے، 26 جولائی کو گوا سے، 29 جولائی کو اورنگ آباد، چنئی، ممبئی، ناگپور سے، 30 جولائی کو رانچی سے، یکم اگست کو احمد آباد، بنگلور، کو چین ، حیدرآباد، جے پور اور 3؍ اگست سے بھوپال سے عازمین حج کی روانگی ہو گی ۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *