مکھرجی نگرمعاملہ: دو پولیس اہلکار برخاست، آٹھ کے خلاف تحقیقات جاری

Share Article

 

نئی دہلی، شمال مغربی ضلع کے مکھرجی نگر علاقے میں گزشتہ جون کے مہینے میں درمیان سڑک پر سربجیت سنگھ کو پیٹنے کے معاملے میں دہلی پولیس نے سختکارروائی کرتے ہوئے مذکورہ کیس میں شاملمزید دو پولیس اہلکاروں کو نوکری سے برخاست کر دیا گیا ہے۔ واقعہ کے بعد سے یہ دونوں پولیس اہلکار معطل چل رہے تھے۔ ڈپٹی کمشنر فرسٹ بٹالین راکیش کمار کی جانب سے جاری آرڈر میں کانسٹیبل پشپندر شیخاوت اور کانسٹیبل ستیہ پرکاش کو نوکری سے برخاست کیا گیا ہے۔ گزشتہ 16 جون کو مکھرجی نگرمیں ہوئے اس واقعہ کاویڈیو سوشل میڈیا پر تیزی سے وائرل ہوگیا تھا۔ اس معاملے کو لے کر علاقے میں زور دار ہنگامہ بھی ہوا تھا۔متعدد سکھ تنظیموں نے اس معاملے کو لے کر پولیس کمشنر انمول پٹنائک سے بھی شکایت کی تھی۔

 

پولیس کے سینئر افسر کے مطابق مذکورہمعاملہ میں کل 10 پولیس اہلکاروں کوملزم بنایا گیا ہے، جن میں سے تین پولیس اہلکاروں کو برخاست کیا گیا ہے، جبکہ باقی آٹھ پولیس اہلکاروں کے خلاف تحقیقات کی جا رہی ہے۔اس واقعہ کو لے کر مکھرجی نگر تھانے میں دو ایف آئی آر درج کی گئی تھی، جن کی جانچ کرائم برانچ کر رہی ہے۔ ان میں سے ایک ایف آئی آر سربجیت سنگھ کی شکایت پر پولیس اہلکاروں کے خلاف کی گئی تھی، جبکہ دوسری ایف آئی آر پولیس اہلکاروں کی شکایت پر سربجیت سنگھ کے خلاف درج کی گئی تھی۔

 

وہیں تفتیش کے دوران پتہ چلا ہے کہ جب سڑک پر سربجیت سنگھ گر گیا تھا تو اس وقت سپاہی پشپندر اورستیہ پرکاش اس کے سر اور اوپری حصے پر لات مار رہے تھے۔اس لئے ان دونوں پولیس اہلکاروں کے خلاف یہ کارروائی کی گئی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *