رمضان المبارک عبادت واطاعت کا مہینہ: مفتی عارف قاسمی

Share Article

Mufti-Arif

دیوبند: رمضان المبارک اللہ تبارک و تعالیٰ کی عبادت و طاعت کا مہینہ ہے، ہر عمل پر عام ایام کے مقابلہ اجر و ثواب میں اضافہ کردیا جاتا ہے۔ روزہ جیسی اہم عبادت کا اجر اللہ تعالیٰ ازخود عنایت فرماتے ہیں لیکن روزہ دار کتنا بھی اہتمام کرے روزہ کے دوران کچھ نہ کچھ کوتاہی ہوجاتی ہے جس کی تلافی کے لئے صدقۃ الفطر کو واجب قرار دیا گیا ہے۔ صدقۃ الفطر کی فضیلت بیان کرتے ہوئے دارالعلوم وقف کے استاد مفتی عارف قاسمی نے کہا کہ صدقہ کی کثرت سے نامہئ اعمال میں نیکیوں کا اضافہ ہوتا ہے، گناہ معاف ہوتے ہیں، دوزخ سے حفاظت ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا اللہ تعالیٰ صدقہ کی ایک کھجور اپنے ہاتھ میں لیتے ہیں اور اس طرح پرورش کرتے ہیں کہ وہ بڑے پہاڑ کے برابر ہوجاتی ہے۔

مفتی عارف قاسمی نے کہا کہ صدقۃالفطر ہر مسلمان مرد، عورت پر واجب ہے آزاد ہو یا غلام، بالغ ہو یا نابالغ۔حضرت عبداللہ ابن عباس رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے صدقہ فطر کو ضروری قرار دیا ہے، جو روزہ دار کے لئے لغو اور بے حیائی کی باتوں سے پاکیزگی کا ذریعہ ہے اور مسکینوں کے لئے کھانے کا انتظام ہے۔ انہوں نے کہا کہ جو شخص اسے عید کی نماز سے پہلے ادا کرے تو یہ مقبول صدقہ ہوگا اور جو اسے نماز عید کے بعد ادا کرے تویہ عام صدقہ ہوگا۔اس روایت سے معلوم ہوتا ہے کہ صدقہ فطرکے واجب ہونے کے دو مقاصد ہیں (۱)روزہ کے دوران ہونے والی کوتاہیوں کی تلافی، امت کے مسکینوں کے لئے عید کے دن کھانے کا انتظام تاکہ وہ بھی عید کی خوشیوں میں شریک ہوسکیں۔

مفتی عارف نے کہا کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا اس دن مسکینوں پر اتنا خرچ کرو کہ وہ سوال سے بے نیاز ہوجائیں۔اس لئے صاحب حیثیت و صاحب وسعت مسلمانوں پر لازم ہے کہ وہ صدقہئ فطرعید کی نماز سے قبل ادا کرنے کا اہتمام کریں۔ گیہوں اور آٹے کے بجائے کھجور، چھوارہ، کشمش کے اعتبار سے صدقہئ فطر ادا کریں تاکہ غرباء و مساکین کا زیادہ سے زیادہ فائدہ ہو۔حضرت علی رضی اللہ عنہ جب بصرہ تشریف لائے اور دیکھا کہ گیہوں سستا ہے تو فرمایا اللہ تعالیٰ نے تمہارے اوپر وسعت فرمائی ہے، اس لئے اگرتم صدقہئ فطر ایک صاع (تین کلو دو سو چھیاسٹھ گرام)کے حساب سے نکالو تو زیادہ بہتر ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *