مودی حکومت کی شفافیت کی پالیسی کی وجہ سے آر ٹی آئی کی ضرورت کم ہوئی: امت شاہ

Share Article

مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے ہفتہ کے روز کہا کہ دنیا کے تمام ممالک کے مقابلے بھارت نچلی سطح تک اطلاعاتینظام قائم کرنے میں کامیاب ہوا ہے۔ مودی حکومت نے اطلاعات کوعوامی سطح پر رکھنے کے لئے کئی اقدامات کئے ہیں تاکہ لوگوں کو حق اطلاعات (آر ٹی آئی) کے تحت درخواست دینے کی ضرورت ہی نہ پڑے۔

امت شاہ نے وگیان بھون میں منعقد ہ سینٹرل انفارمیشن کمیشن (سی آئی سی) کے 14 ویں سالانہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ 14 سالوں میں آر ٹی آئی ایکٹ کی وجہ سے عوام اور انتظامیہ کے درمیان کھائی کو پاٹنے میں بہت مدد ملی ہے اور عوام کا انتظامیہ اورقانون کے تئیں اعتماد بڑھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حق اطلاعات کا جب قانون بنا تب کئی طرح کے خدشات کا اظہار کیا جاتاتھا۔ اس کے غلط استعمال کا خدشہ ظاہر کیا گیا لیکن آج ہم کہہ سکتے ہیں کہ غلط استعمال بہت کم ہوا ہے اور بہتر استعمال بہت زیادہ۔
وزیر داخلہ نے کہا کہ مودی حکومت نے ڈیش بورڈ کے ذریعے ایک نئے شفافیت بھرے دور کے آغاز کیاہے۔ سوبھاگیہ منصوبہ کے تحت لوگ ڈیش بورڈ میں یہ دیکھ سکتے ہیں کہ ان کے گھر میں بجلی کب لگنے والی ہے۔ سوچھ بھارت کے تحت کتنے ٹوائلٹ بنے ۔

اس کے لئے آر ٹی آئی کی ضرورت نہیں ہے۔ ڈیش بورڈ میں سرپنچ دیکھ سکتا ہے کہ اس کے گاؤں میں کتنے ٹوائلٹ کب تک بننے والے ہیں۔ دنیا بھر کی حکومتیں حق اطلاعات کا قانون بنا کے رک گئیں لیکن بھارت میں ایسا نہیں ہے۔ بھارت دنیا میں پہلا ملک ہے جونچلی سطح تک ایک جوابدہ اطلاعاتی نظام کی تخلیق کرنے میں کامیاب ہوا ہے۔ سینٹرل انفارمیشن کمیشن سے لے کر ہر ریاست میں انفارمیشن کمیشن قائم کئے گئے ہیں۔ تقریبا ًپانچ لاکھ سے زیادہ انفارمیشن آفیسر۔ ملازمین آر ٹی آئی ایکٹ سے متعلق کاموں کو نمٹانے میں مدد دے رہے ہیں۔

شاہ نے کہا کہ نریندر مودی حکومت شہریوں کے ذریعہآر ٹی آئی درخواست دائر کرنے کی ضرورت کو کم کرنے کے لئے زیادہ سے زیادہ اطلاعات پبلک ڈومین میں ڈالنے کے لئے بنیادی ڈھانچہ بنا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حق اطلاعات کے ساتھ ساتھ لوگوں میں ذمہ داری کا احساس بھی بیدار کریں۔ حق اطلاعات کے قانون کو زیادہ بامعنی بنانے کے لئے ذمہ داری کا احساس بھی لوگوں میں پیدا کرناضروری ہے۔ بے سبب اس حق کا استعمال نہ کریں، اس کا استعمال شفافیت اورمتحرک بنانیکے لئے ہی کریں۔ حالات ایسے بنیں کہ لوگوں کو آر ٹی آئی لگانے کی ضرورت ہی نہ پڑے، بلکہ حکومت خود سامنے آکر اطلاعات دے، ایسا نظام ہو۔ اس موقع پر وزیر اعظم کے دفتر میں وزیر مملکت ڈاکٹر جتیندر سنگھ، چیف انفارمیشن کمشنر سدھیر بھارگو، انفارمیشن کمشنر ومل جلکا اور عملے محکمہ کے سیکرٹری سی. چندرمولی بھی موجود رہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *