سابق وزیر نروتم مشرا کا دگوجے پر حملہ، کہا خاموشی توڑیں اور عوام کو جواب دیں

مدھیہ پردیش کانگریس میں مچے اندرونی خلفشار کے درمیان اور وزیر اعلیٰ کمل ناتھ کی نصیحت کے بعد جمعہ کے روزوزیر جنگلات امنگ سنگار اور سابق وزیر اعلیٰ دگ وجے سنگھ کے درمیان ملاقات ہونے جا رہی ہے۔ امید کی جا رہی ہے کہ اس ملاقات میں دونوں ہی سیاستدان باہمی جھگڑے کو بھلا کر ایک ساتھ پارٹی کے لئے کھڑے ہو جائیں گے لیکن مدھیہ پردیش کے سابق وزیر اور بی جے پی ممبر اسمبلی نروتم مشرا نے دونوں کی ملاقات کو لے کر سوال کھڑے کئے ہیں۔

جمعہ کے روز میڈیا سے بات کرتے ہوئے نروتم مشرا نے دگ وجے سنگھ پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ ملاقات کا کیا نتیجہ ہوگا یہ سب کو پتہ ہے۔ چرچہ کے بعد دونوں میڈیا کے سامنے گلے میں ہاتھ ڈال کر نکلیں اور کہیں گے سب ٹھیک ہے۔ نروتم مشرا نے نشانہ لگاتے ہوئے کہا کہ حقیقت تو یہ ہے کہ سب کچھ ’آل از ویل ‘ نہیں ہے۔ ریاست کے عوام کو ان سوالوں کے جواب چاہئے جس کی وجہ سے ملک بھر میں صوبہ کی بدنامی ہو رہی ہے۔ وزیر کے ذریعہ دگوجے کو بلیک میلر، ریت مافیا، حکومت چلانے والا، شراب مافیا سمیت ناجانے کیا کیا کہا گیا، دگوجے کو اس پر صفائی دینی چاہئے۔ دگ وجے سنگھ پہلے تو اپنی خاموشی توڑیں اور سارے سوالات کا جواب عوام کو دیں۔

 

بتا دیں کہ وزیر جنگلات کے ذریعہ دگ وجے سنگھ کو لے کر دیے گئے بیان کے بعد سے ہی ان کی طرف سے کوئی جواب نہیں آئی ہے۔ معاملہ طول پکڑنے کے بعد سی ایم کمل ناتھ نے دونوں سے مل کر آپس میں بات چیت کرنے کو کہا تھا جس کے لئے وزیر جنگلات امنگ سنگار کی رضامندی کے بعد جمعہکے روز صبح دس بجے سے دوپہر 12بجے تک کا وقت طے کیا گیا تھا۔ امید کی جا رہی ہے کہ دونوں کی درمیان ملاقات ہوگی اور سب کچھ ٹھیک ہو سکتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *