سدرشن ٹی وی کو اقلیتی کمیشن کا نوٹس

Share Article
Sudarshan-TV
نئی دہلی : دہلی اقلیتی کمیشن نے شمالی دہلی کے علاقہ بوانہ کے بارے میں ایک رپورٹ نشر کرنے کے سلسلے میں سدرشن ٹیلیوڑن کو نوٹس جاری کیا ہے۔ مذکورہ چینل نے 11 مئی کو ایک پروگرام نشر کرکے بوانہ کے باسیوں کو بنگلہ دیشی اور برمی روہنگیا بتایا تھا جبکہ وہ ہندوستانی شہری دہلی کے مختلف علاقوں سے لاکر باقاعدہ سرکاری طورپر سالہا سال قبل اس علاقے میں بسائے گئے ہیں۔

 

یہ بھی پڑھیں   لاکھوں بینک ملازمین آج سے 2دن کی ہڑتال پر

 

کمیشن نے سدرشن ٹی وی کے مینجنگ ڈائرکٹر کو حکم دیا ہے کہ دستاویزی ثبوت کے ساتھ جواب دیں کہ بوانہ کے شہری بنگلادیشی اور روہنگیا ہیں۔ اگر چینل یہ نہیں کرسکتا ہے تو غیر مشروط طور سے معافی مانگے اور بتائے کہ متعلقہ رپورٹروں اور اسٹاف رائٹرز کے خلاف اس نے کیا ایکشن لیا جنہوں نے یہ جھوٹی خبر مشتہر کی جس کی وجہ سے ہندوستانی شہریوں کے خلاف فرقہ وارانہ ماحول بنا اور فساد ہونے کا خدشہ پیدا ہوا۔ کمیشن نے سدرشن ٹی وی کو مزید حکم دیا ہے کہ اس معافی نامے کو ٹیلیوڑن پر بھی چلایا جائے اور ساتھ ہی ایک عہدنامہ بھی لکھ کر دیا جائے کہ مذکورہ چینل اب دوبارہ اس طرح کی غیر ذمہ دارانہ حرکت نہیں کرے گا۔کمیشن نے اپنے حکم میں مزید لکھا ہے کہ تعمیل نہ کرنے کی صورت میں مذکورہ ٹیلیویڑن چینل کے خلاف دہلی اقلیتی کمیشن کے قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔ کمیشن نے مذکورہ ٹیلیوڑن چینل کو 21 جون تک جواب دینے کا حکم دیا ہے۔
اسی کے ساتھ کمیشن نے شمالی ضلع کے ڈی سی پی کو نوٹس دیا ہے کہ 21 جون تک جواب دیں کہ ٹیلی کاسٹ ہونے والی مذکورہ رپورٹ کے سلسلے میں انہوں نے کیا قدم اٹھایا نیز بالخصوص بوانہ کے گنگا رام نامی شخص کی حرکتوں کے بارے میں پولیس کیا کررہی ہے جو وہاں کے شہریوں کے بارے میں بنگلادیشی اور روہنگیا ہونے کی افواہ پھیلا تا رہتا ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *