فوجی وردی پہن کر منوج تیواری نے مانگا ووٹ، بعد میں کر دی فوج کی نہرو سے مقابلہ

Share Article

manoj-tiwari

نئی دہلی: جب ملک میں جوان شہید ہو رہے تھے تب رینکا کے پاپا گانے والے منوج تیواری کا فوج کے تئیں محبت اتنی امڈی کی وہ ایک انتخابی ریلی میں فوجی وردی پہن کر پہنچ گئے، وہ شاید بھول گئے تھے کہ وہ ووٹ مانگنے جا رہے ہیں نہ کہ فلم میں ایکٹنگ کرنے،لیکن کیا کریں طویل عرصہ سے گائیکی اور اداکاری کرنے والے جب لیڈر بنتے ہیں تو ان سے اس طرح کی بھول ہو جاتی ہے۔

دراصل، ہفتہ کو بی جے پی نے ملک بھر میں وجے سنکلپ موٹر سائیکل ریلی نکالی تھی۔ منوج تیواری نے اس موٹر سائیکل ریلی میں فوجی وردی پہن کر حصہ لیا جس کو لے کر ان پر فوج پر سیاست کرنے اور فوجیوں کی توہین کرنے کے الزامات لگ رہے ہیں۔

ترنمول کانگریس کے ایم پی ڈیریک او برائن نے ٹویٹ کر کہا ’بے شرم بے شرم بے شرم۔ بی جے پی کے رہنما اور دہلی صدر منوج تیواری فوجیوں کی یونیفارم پہن کر ووٹ مانگ رہے ہیں۔ بی جے پی -مودی -شاہ ہمارے جوانوں پر سیاست کر رہے ہیں اور ان کی توہین کر رہے ہیں اور پھر حب الوطنی پر لیکچر دے رہے ہیں۔‘

دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کے میڈیا مشیر ناگیندر شرما نے تو اس کو براہ راست جرم بتایا ہے۔’میں تیواری اور بی جے پی کی بے شرمی کی بھی بات نہیں کر رہا ہوں لیکن جرم جرم ہوتا ہے۔‘

سوشل میڈیا پر اس کو لے کر منوج تیواری تنقید اور سوالات سے گر گئے۔ اس کے بعد منوج تیواری نے ٹوئٹر پر اپنی صفائی دی۔ منوج تیواری نے ٹویٹ کر کہا کہ ’میں نے فوجی وردی اس لئے پہنی کیونکہ مجھے میری فوج پر فخر ہے۔میں بھارتیہ فوج میں نہیں ہوں لیکن میں یکجہتی کے احساس کا اظہار کر رہا تھا، اسے توہین کی طرح کیوں لیا جائے؟ میں ہماری فوج کا سب سے زیادہ احترام کرتا ہوں، اس دلیل سے تو اگر کل کو میں نہرو جیکٹ پہن لوں تو کیا وہ جواہر لال نہرو کی توہین ہو جائے گا؟‘ منوج تیواری شاید یہ بھول گئے کہ انہوں نے جانے انجانے میں ہندوستانی فوج کا مقابلہ جواہر لال نہرو سے کر دئے، منوج تیواری سیاست کے سطح کو اور کتنا گرائیں گے؟

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *