لٹیرا دلہا گرفتار،کارنامہ جان کرہوجائیں گے حیران

Share Article
جنوبی دہلی کی پولیس نے ایک 39سالہ شخص کو خواتین کو بہلا پھسلاکر شادی کرنے اور اور انکے ساتھ عصمت دری کرنے کے الزام میں گرفتار کیا ہے۔پولیس کے مطابق وہ پہلے میٹریمونئیل سائٹس (matrimonial sites)پر لڑکیوں سے باتیں کرتا تھا اور ان سے دوستی کرلیتا تھا ۔دوستی کرنے کے بعد وہ ان سے ملتا تھا اور ان سے شادی بھی کر لیتا تھا ۔اتنا ہی نہیں بلکہ ان کی عصمت دری بھی کرتا اور پھر ان کا سامان لے کر غائب ہوجاتا تھا۔ملزم کا نام سوریہ بابو بتایا جا رہا ہے۔وہ کرناٹک کے بنگلورو کی ایک آئی ٹی کمپنی میں کام کرتا تھا۔وہ بنیادی طور پر آندھرا پردیش کے چتوڑ ضلع کا رہنے والا ہے ۔ایک خاتون کی شکایت کی بنیاد پر پولیس نے سوریہ بابو کو گرفتار کرلیا ہے۔متا ثرہ خاتون نے اپنی شکایت میں بتایا ہے کہ سوریہ بابو شخص نے اس کے پھنسا کر شادی کی تھی اور اس کے ساتھ عصمت دری بھی کی اور بھر اس کا سامان لے کر اس کو چھوڑ کر بھاگ گیا۔آپ کو بتادیں کہ یہ شکایت گزشتہ سال جولائی میں درج کرائی گئی تھی لیکن ملزم نے اپنا موبائل نمبر تبدیل کرلیا تھا اور انڈرگراؤنڈ ہوگیا تھا۔
پولیس تب سے اب تک اس کو ڈھونڈھنے میں لگی ہوئی تھی۔پولیس نے اس کمپیوٹر کے ایڈریس کاپتہ لگایا جہاں سے وہ میٹریمونیل سایٹ استعمال کرتا تھا ۔بہر کیف اس طرح سے 13جنوری کو ملزم کو پولیس نے پکڑ ہی لیا ۔مزید پوچھ تاچھ کرنے کے لئے ملزم کو دہلی لایا گیا ہے۔جانچ کرنے پر معلوم ہوا کہ بابو پہلے سے ہی شادی شدہ ہے اور اس کا ایک بچہ بھی ہے۔اس نے پولیس کو بتایا کہ اس کے نام سے کئی میٹری مونیئل سائیٹس پر پروفائل بنی ہوئی ہیں۔پولیس کا ماننا ہے کہ اس نے اس طرح سے 3اور خواتین کو دھوکہ دیا ہے۔پولیس اس معاملے میں اس کی بیوی کا بھی رول جاننے میں مزید جانچ کررہی ہے۔سوریہ بابو نامی شخص لڑکیوں سے میٹری مونئیل سائیٹ پر دوستی کرتا تھا پھر شادی کرتا تھااور ہنی مون کا پلان بناکر ان کا سارا سامان لوٹ کر بھاگ جاتا تھا ۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *