بی جے پی شہر صدر گجراج رانا نے کہا کہ مغربی بنگال کی ممتا حکومت کو لوک سبھا انتخابات میں ملی ہار کے بعد سنگھ اوربی جے پی کی حمایت یافتہ لوگوں کو سازش کے تحت قتل کروایا جارہا ہے ،مرکزی حکومت کو بنگال میں ہورہے قتل عام پر سنجیدگی سے غور وفکر کرنا چاہئے اور ممتا حکومت کو برخاست کرکے صدر راج نافذ کرنا چاہئے ۔ ٹیچر کالونی میں واقع کیمپ دفتر پر کارکنان کی میٹنگ سے سے خطاب کرتے ہوئے گجراج رانا نے کہاکہ مغربی بنگال میں قانون کا راج ختم ہوگیا ہے ، پورے علاقہ میں لاقانونی کا راج ہے جس کے چلتے ممتا حکومت کے زیر اثر افسران اور ممتا کی پارٹی ٹی ایم سی کے کارکنان بھاجپا اور سنگھ کے لوگوں کو قتل کررہے ہیں ۔
 
 
انہوں نے کہا کہ انتخابات میں ملی ہار کے بعد ممتا بنرجی نے اپنا ذہنی توازن کھودیا ہے ۔انہوںنے کہا کہ رام کا نام لینے پر بھی خواتین سے لے کر نوجوانوں تک کو جیل میں بھیجا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہاں کے حالات کے مدنظر مرکزی حکومت کو فوری اقدامات کرتے ہوئے مغربی بنگال میں صدر راج نافذ کردینا چاہئے ، شہر کے جنرل سکریٹری ارون گپتا نے کہا کہ قانون کو قتل کرنے والی ممتا بنرجی حکومت عوام کا یقین کھوچکی ہے ، وہاں کے عوام کو تحفظ فراہم کرنے کے لئے صدر راج کا نفاذ نہایت ضروری ہے۔ میٹنگ سے قبل کارکنان نے بنگال میں ہورہے قتل پر غصہ کا اظہارکرتے ہوئے مرنے والوں کو خراج عقیدت پیش کیا ، میٹنگ میں دیپک رنسورہ، بجیندر گپتا، پروین گویل، ششانت گوڑ، وکاس پنڈیر، ارجن سنگھل، منوج شرما وغیرہ موجود رہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here