مہاراشٹر کی 288 سیٹوں پر پیر کی صبح سات بجے سے ووٹ ڈالے جا رہے ہیں۔ آر ایس ایس سربراہ ڈاکٹر موہن بھاگوت نے صبح صبح ناگپور میں اپنے حق رائے دہی کا استعمال کیا۔ موہن بھاگوت نے ووٹ ڈالنے کے بعد لوگوں سے زیادہ تعداد میں ووٹ ڈالنے کی اپیل کی۔
مرکزی وزیر اور بی جے پی کے سینئر لیڈر نتن گڈکری نے بھی اپنے ووٹ کا استعمال کیا۔ گڈکری نے اپنے پورے خاندان کے ساتھ ناگپور میں ووٹنگ کی۔ ووٹنگ کے بعد انہوں نے عوام سے زیادہ سے زیادہ پولنگ کا اعلان کیا اور ایک بار پھر دیویندر فڑنویس کے وزیر اعلیٰ بننے کا اعتماد جتایا۔

وہیں بالی ووڈ کی مشہور اداکارہ شوبھا کھوٹے نے بھی ووٹ ڈالا۔ شوبھا کھوٹے نے اندھیری مغرب اسمبلی حلقہ میں ووٹنگ کی۔ این سی پی لیڈر اجیت پوار نے بھی ووٹ دیا۔ پوار بارامتی اسمبلی سیٹ سے الیکشن لڑ رہے ہیں۔ ان کے سامنے بی جے پی سے گوپی چند پاڈلکر ہیں۔
ریاست کی اسمبلی کی 288 سیٹوں کے لئے آزادانہ اور منصفانہ طور پر انتخابات کرانے کے لئے سخت سیکورٹی کے انتظامات کئے گئے ہیں۔ اس الیکشن میں پہلی بار ووٹر ویریفیئبل کاغذ آڈٹ ٹریل (وی وی پیٹ) مشین کا استعمال ہو رہا ہے۔ ریاست کے 46 اسمبلی حلقوں کے 96661 پولنگ مراکز پرتقریباً 1.35 لاکھ وی وی پیٹ مشینیں اور 1.80 لاکھ ای وی ایم لگائی گئی ہیں اور 1.27 کنٹرول یونٹ تعینات کئے گئے ہیں۔
قابل ذکر ہے کہ مہاراشٹر اسمبلی انتخابات میں ایک طرف بی جے پی-شیوسینا اتحاد ہے، تو دوسری طرف کانگریس این سی پی اتحاد ہے۔ ان انتخابات میں سب سے خاص یہ ہے کہ ٹھاکرے خاندان سے پہلی بار کوئی شخص الیکشن لڑ رہا ہے۔ شیوسینا کے سربراہ ادھو ٹھاکرے کے بیٹے آدتیہ ٹھاکرے ورلی سیٹ سے الیکشن لڑ رہے ہیں۔ انتخابات کے نتائج 24 اکتوبر کو اعلان کیا جائے گا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here