مہاراشٹر میں کانگریس کو جھٹکا، ٹکٹ نہ ملنے سے ناراض اپوزیشن لیڈر کا بیٹابی جے پی کی پناہ میں

Share Article

suje-paltal

ممبئی: لوک سبھا انتخابات سے پہلے مہاراشٹر، گجرات اور کرناٹک ہی نہیں ملک بھر میں بی جے پی کانگریس کے خیمے میں لگاتار نقب زنی کر رہی ہے۔

خبر ہے کہ مہاراشٹر میں بھی اب کانگریس کو دجھٹکا لگ سکتا ہے۔ کانگریس لیڈر سجے وکھے پاٹل منگل کو بھارتیہ جنتا پارٹی میں شامل ہو سکتے ہیں۔ سجے وکھے مہاراشٹر اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر رادھاکرشن وکھے پاٹل کے بیٹے ہیں اور پیشے سے نیوروسرجن ہیں۔

بتایا جا رہا ہے کہ وہ احمد نگر سیٹ سے الیکشن لڑنا چاہتے ہیں، لیکن کانگریس نے انہیں وہاں سے امیدوار نہیں بنایا۔ گزشتہ انتخابات میں احمد نگر نشست کانگریس نے اپنی حلیف پارٹی نیشنل کانگریس پارٹی کو دی تھی۔ رپورٹیں کے مطابق لوک سبھا انتخابات کے لئے کانگریس اور این سی پی میں سیٹوں کی تقسیم ہو چکی ہے۔ کانگریس نے اپنے پاس 26 نشستیں برقرار رکھی ہیں، وہیں این سی پی کو 22 سیٹیں دی ہیں، لیکن این سی پی احمدنگر سیٹ سجے وکھے پاٹل کو نہیں دینا چاہتی۔

بتایا جا رہا ہے کہ شرد پوار کی پارٹی این سی پی سے رادھاکرشن وکھے پاٹل نے زور دیا تھا کہ ان کے بیٹے کے لئے احمدنگر لوک سبھا سیٹ چھوڑ دی جائے، لیکن این سی پی ان کی درخواست ٹھکرا دیا۔ ضلع بی جے پی کے ایک رہنما نے بتایا کہ سجے وکھے مہاراشٹر کے وزیر اعلیٰ دویندر فڈنویس کی موجودگی میں منگل کو بی جے پی میں شامل ہوں گے۔ دلیپ گاندھی احمدنگر لوک سبھا سیٹ سے بی جے پی کے سبکدوش ہونے والے ممبر پارلیمنٹ ہیں۔

گزشتہ ماہ مہاراشٹر کانگریس کے سربراہ اشوک چوہان نے کہا تھا کہ رادھاکرشن وکھے پاٹل کو اپنے بیٹے کو منانا چاہئے۔ انہوں نے کہا تھا، ’سجے وکھے کو معلوم ہونا چاہئے کہ ان کی فریاد پر کانگریس پارٹی غور کر رہی ہے، میں نے ان کے والد کو بھی مشورہ دیا ہے کہ انہیں اپنے بیٹے کو منائے۔

سجے وکھے نے پہلے کہا تھا کہ اگر کانگریس پارٹی سے انہیں ٹکٹ نہیں ملتا ہے تو وہ آزاد امیدوار کے طور پر الیکشن لڑیں گے۔ مہاراشٹر کے وزیر اعلیٰ دیویندر فڑنویس کے ساتھ ملاقات کے دوران بی جے پی لیڈروں نے سجے وکھے کے انٹری کی مخالفت کی ہے۔ پارٹی لیڈر چاہتے ہیں کہ انہیں لوک سبھا انتخابات میں ٹکٹ دینے سے پہلے انہیں بی جے پی کے لئے کام کرنا چاہئے۔

مہاراشٹر میں چار مراحل میں ہوں گے لوک سبھا انتخابات

مہاراشٹر میں لوک سبھا انتخابات چار مراحل میں ہوں گے۔ پہلے مرحلے یعنی 11 اپریل کو ودربھ علاقے میں پولنگ ہوگی، جبکہ ممبئی کی تمام سیٹوں پر29 اپریل کو پولنگ ہوگی۔ مہاراشٹر میں 48 لوک سبھا سیٹ ہیں جو اتر پردیش کی 80 سیٹوں کے بعد سب سے زیادہ ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *