الیکشن کمیشن کی طرف سے الیکشن لڑنے پر پابندی لگائے جانے کے خلاف مدھو کوڑا پہنچے سپریم کورٹ

Share Article

 

انتخابی اخراجات کے بارے میں صحیح معلومات نہیں دینے پر کمیشن نے انہیں 2017 میں نااہل قرار دیا تھا، 15 کو سماعت

جھارکھنڈ کے سابق وزیر اعلیٰ مدھو کوڑا نے الیکشن کمیشن کی طرف سے ان پر الیکشن لڑنے پر پابندی لگائے جانے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا ہے۔ 2009 کے لوک سبھا انتخابات میں اخراجات کے بارے میں صحیح معلومات نہیں دینے پر الیکشن کمیشن نے انہیں 2017 میں نااہل قرار دیا تھا۔ سپریم کورٹ اس درخواست پر 15 نومبر کو سماعت کرے گا۔

مدھو کوڑا پر الزام ہے کہ انہوں نے 2009 کے لوک سبھا انتخابات میں خرچ کی صحیح معلومات نہیں دی تھی۔ اس کے بعد الیکشن کمیشن نے ان پر الیکشن لڑنے پر تین سال کے لئے روک لگا دی تھی۔ کوڑا نے جھارکھنڈ کی چائی باسا سیٹ سے 2009 انتخابات جیتا تھا۔

الیکشن کمیشن کو شکایات ملی تھیں کہ کوڑا نے انتخابات خرچ کی صحیح تفصیلات نہیں دی۔ اس کے بعد الیکشن کمیشن نے کوڑا کو نوٹس جاری کر کے پوچھا تھا کہ صحیح تفصیلات نہ دینے پر کیوں نہ انہیں انتخاب لڑنے سے نااہل قرار دیا جائے؟ الیکشن کمیشن نے کہا تھا کہ کوڑا کی طرف سے جمع کروائی گئی تفصیلات غلط تھی۔ اس کے بعد کمیشن نے انہیں تین سال کے لئے انتخاب لڑنے پر روک لگانے کا حکم دیا۔ الیکشن کمیشن کے اسی فیصلے کو کوڑا نے سپریم کورٹ میں چیلنج کیا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *